جنوبی افریقی کرکٹر فاف ڈوپلیسی پر بال ٹیمپرنگ کا الزام

فاف ڈوپلیسی

جنوبی افریقہ کی کرکٹ ٹیم کے کپتان فاف ڈوپلیسی پر آسٹریلیا کے خلاف دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ کے دوران بال ٹیمپرنگ یا گیند کی شکل خراب کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

ہوبارٹ میں کھیلا جانے والا یہ میچ جنوبی افریقہ نے ایک اننگز اور 80 رنز سے جیتا تھا اور اس کے دوران منگل کو ٹی وی فوٹیج میں 32 سالہ ڈوپلیسی کو مبینہ طور پر منہ میں موجود ٹافی کے لیس دار تھوک سے گیند چمکاتے دیکھا گیا تھا۔

آئی سی سی کی جانب سے جمعے کو جاری ہونے والے بیان کے مطابق ڈوپلیسی کو انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے ضابطۂ اخلاق کی لیول ٹو کی خلاف ورزی کا الزام ہے اور انھیں ایک مصنوعی ذریعے سے گیند کی شکل کی تبدیلی کا ملزم قرار دیا گیا ہے۔

آئی سی سی کے مطابق ڈوپلیسی نے اس الزام کو تسلیم کرنے سے انکار کیا ہے اور اب اس معاملے کی سماعت آئی سی سی کے میچ ریفری اینڈی پائی کرافٹ کریں گے۔

ضابطۂ اخلاق کی لیول ٹو کی خلاف ورزی کی سزا 50 سے 100 فیصد تک میچ فیس کی بطور جرمانہ ادائیگی ہے جس کے علاوہ کھلاڑی کو معطلی کا سامنا بھی کرنا پڑ سکتا ہے۔

ڈوپلیسی ماضی میں بھی بال ٹیمپرنگ کرنے پر نصف میچ فیس بطور جرمانہ ادا کر چکے ہیں۔ یہ واقعہ سنہ 2013 میں پاکستان کے خلاف دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میں پیش آیا تھا۔

اس وقت انھیں گیند کو اپنے پاجامے کی جیب کی زپ سے رگڑتے ہوئے دیکھا گیا تھا اور امپائرز نے موقع پر جنوبی افریقہ کو پانچ رنز کی پنلٹی دیتے ہوئے گیند تبدیل کر دی تھی۔

تاہم اس موقع پر ڈوپلیسی نے اپنی غلطی تسلیم کر لی تھی۔

Scroll To Top