متاثرہ علاقوں کو کورونا وائرس سے کلےئر ہونے تک سےل رکھا جائے گا، عثمان بزدار

وزیراعلیٰ پنجاب کی زیر صدارت خصوصی اجلاس، کورونا وباءکی صورتحال، حفاظتی اقدامات اورمرےضوں کے علاج معالجے کے انتظامات کا جائزہ

لاہور(( این این آئی)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیر صدارت وزےراعلیٰ آفس مےں خصوصی اجلاس منعقد ہوا ، اجلاس میں صوبے میں کورونا وباءکی صورتحال، حفاظتی اقدامات اور متاثرہ مرےضوں کے علاج معالجے کے انتظامات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ کور کمانڈر لاہور لیفٹیننٹ جنرل ماجد احسان، ڈی جی رینجرز پنجاب میجر جنرل محمد عامر مجید،چیف سیکرٹری میجر (ر) اعظم سلیمان، انسپکٹر جنرل پولیس شعیب دستگیر، سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو،چےئرمےن منصوبہ بندی و ترقےات، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ اور اعلیٰ سول و عسکری حکام نے
اجلاس میں شرکت کی ۔کور کمانڈر لاہور لیفٹیننٹ جنرل ماجد احسان نے سول حکومت کوحفاظتی اقدامات اوردےگر امور پر ہر طرح کے تعاون کی ےقےن دہانی کرائی ۔اجلاس مےںفےصلہ کےاگےا کہ کورونا وباءپر قابو پانے اور متاثرہ مریضوں کے بہترین علاج معالجے کےلئے کاوشوں کومزےد تےز کےا جائے گا۔اجلاس مےں پنجاب مےں لاک ڈاو¿ن پر سختی سے عملدرآمد ےقےنی بنانے پر اتفاق کےاگےا۔اجلاس مےں فےصلہ کےاگےا کہ کورونا کی وباءسے نمٹنے کیلئے اقدامات کو تسلسل کے ساتھ جاری رکھا جائے گا۔اجلاس مےں لاک ڈاو¿ن مےں مزےد توسےع پر بھی غور کےاگےااوراس ضمن مےں مختلف تجاوےز کا جائزہ لےاگےا۔ اجلاس مےں فےصلہ کےاگےا کہ متاثرہ علاقوں کو کورونا وائرس سے کلےئر ہونے تک سےل رکھا جائے گا اوردفعہ144کی خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہےں کی جائے گی۔خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانون حرکت مےں آئے گا۔اجلاس میں کئے گئے فیصلوں پر من و عن عملدرآمد یقینی بنایا جائے گا۔وزےراعلیٰ عثمان بزدارنے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے کورونا وائرس کے مرض کی تشخےص کےلئے روزانہ 3100ٹےسٹ کرنے کی صلاحےت حاصل کرلی ہے۔ صوبے مےں ٹےسٹنگ سہولت کی استعداد کار جلد 10ہزار تک بڑھائی جائے گی۔صوبے مےں کوروناکے مرض کی تشخےص کےلئے 8نئی لےبز بنا رہے ہےں،3لےبزجلد فنکشنل ہوجائےںگی ۔انہوںنے کہا کہ کورونا وائرس کے حوالے سے حساس مقامات کی کڑی نگرانی کی جارہی ہے ۔جےلوں مےں قےدےوں کی سکرےننگ کاعمل شروع کردےاگےا ہے ۔انہوںنے کہا کہ کمزورطبقے کو رےلےف دےنے کےلئے مالی امداد کے پروگرام کا آغاز ہوچکا ہے ۔پنجاب مےں مستحق افراد کو 12ہزار روپے کی مالی امداد دےںگے۔ہسپتالو ںمیں ڈاکٹروں اور طبی عملے کی حفاظت کے لئے ضروری اقدامات کررہے ہےں-انہوںنے کہا کہ عوام کی زندگیاں محفوظ کرنے کیلئے مزید اقدامات جاری رکھیں گے۔گندم کٹائی مہم کا آغاز ہوچکا ہے۔کاشتکاروں سے 1400روپے فی من گندم خرےدی جائے گی۔صوبے مےں گندم کے وافر ذخائر موجود ہےں۔انہوںنے کہا کہ رواں برس45لاکھ مےٹرک ٹن گندم خرےدنے کا ہدف مقررکےا ہے ۔گندم خرےداری مراکز پر کاشتکاروں کےلئے سماجی فاصلے برقرار رکھنے کےلئے خصوصی ہداےات جاری کی گئی ہےں۔اجلاس مےں ڈاکٹروں،نرسوں اورپےرا مےڈےکل سٹاف کی خدمات کو سراہا گےاجبکہ پولےس ،پاک فوج اوررےنجرز کے افسروں و اہلکاروںکی خدمات کو بھی خراج تحسےن پےش کےاگےا۔ اجلاس میں کورونا وائرس سے پےدا ہونے والی صورتحال ، احتےاطی تدابےر اورحفاظتی اقدامات پر عملدرآمد کا تفصیلی جائزہ لےاگےا۔ متاثرہ مریضوں کے علاج معالجے کیلئے انتظامات اورڈاکٹروں کےلئے حفاظتی لباس کے امور پر بھی غور کےاگےا۔گندم خرےداری مہم کے دوران حفاظتی تدابےر اورٹڈی دل کے حملے سے فصلوں کو بچانے کے اقدامات پر بھی غورکےاگےا۔

You might also like More from author