عمران خان مبارکباد کے مستحق ہیں:پاکستان تیزی سے ترقی کرتا ہوا ملک ہے، صدرورلڈ بینک

  • خواتین کی ترقی اور انہیں بااختیار بنانے کے اقدامات حوصلہ افزاءہیں، ورلڈ بینک پاکستان کو ایک کامیاب اور خوشحال ملک کے طور پر دیکھنا چاہتا ہے ،مختلف شعبوں میں تعاون کے لیے پرعزم ہیں،ڈیوڈدمالپاس
  • ملکی نظام کو موجودہ دور کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے لیے کوشاں ہیں، حکومت بہترین معاشی ٹیم کی بدولت چیلنجز پر قابو پا رہی ہے، ترقی کے لیے نظام تعلیم کو بہتر بنانا اور بیرونی سرمایہ کاری کے لیے اعتماد کا فروغ ضروری ہے، عمران خان

اسلام آباد(الاخبار نیوز) ورلڈ بینک کے صدر ڈیوڈ میل پاس کا کہنا ہے کہ پاکستان میں کاروباری آسانیوں سے متعلق رینکنگ میں بہتری آئی، پاکستان تیزی سے ترقی کرتا ہوا ملک ہے۔اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر ورلڈ بینک کا کہنا تھا کہ کاروبارمیں آسانیوں سے متعلق تقریب میں شرکت پرخوشی ہے، گزشتہ ہفتے کاروبار سے متعلق رپورٹ شائع ہوئی، وزیراعظم عمران خان کاروبار میں آسانی سے متعلق اقدامات پر مبارک باد کے مستحق ہیں۔صدر ورلڈ بینک کا کہنا تھا کہ پاکستان تیزی سے ترقی کرتا ہوا ملک ہے، پاکستان میں کاروباری آسانیوں سے متعلق رینکنگ میں بہتری آئی ہے، خواتین کی ترقی اور بااختیار بنانے کے اقدامات بھی حوصلہ افزائ ہیں۔ ورلڈ بینک پاکستان کو ایک کامیاب اور خوشحال ملک کے طور پر دیکھنا چاہتا ہے اور پاکستان سے مختلف شعبوں میں تعاون کے لیے پرعزم ہے۔صدر ورلڈ بینک نے کہا کہ تجارتی اصلاحات کا مقصد معاشی استحکام ہے، اصلاحات سے درمیانے اور چھوٹے درجے کے کاروبار کو فروغ ملے گا، محصولات کی وصولی آسان اور کاروباری طبقے اور حکومت کے درمیان دوری کم ہوگی، پاکستان میں اہم اصلاحات کی بھرپور صلاحیت موجود ہے، پاکستان کو اپنی برآمدات میں نمایاں اضافے کی ضرورت ہے۔ دریں اثناءوزیراعظم عمران خان نے کہاہے کہ ملکی نظام کو موجودہ دور کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے لیے کوشاں ہیں، حکومت بہترین معاشی ٹیم کی بدولت چیلنجز پر قابو پا رہی ہے۔ جمعرات کو کاروبار میں آسانیوں سے متعلق تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ 60 کی دہائی میں پاکستان تیزی سے ترقی کرنے والا ملک تھا اور اس ترقی میں زیادہ حصہ صنعتوں کا تھا، ایشیا میں پاکستان کا نظام حکومت اور بیورو کریسی بہترین تھی تاہم بدقسمتی سے پاکستان کے عام آدمی کو ترقی کے ثمرات نہیں ملے۔وزیراعظم نے کہا کہ حکومت کو مختصر اور طویل المدتی چیلنجز کا سامنا ہے لیکن ہم پھر بھی ملکی نظام کو موجودہ دور کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے لیے کوشاں ہیں، ملکی ترقی کے لیے نظام تعلیم کو بہتر بنانا اور بیرونی سرمایہ کاری کے لیے اعتماد کا فروغ ضروری ہے، کاروباری آسانیوں سے متعلق اقدامات پر ماہرین کی کاوشیں قابل تعریف اور کرنٹ اکاوَنٹ خسارے میں کمی پر معاشی ٹیم مبارکباد کی مستحق ہے، حکومت بہترین معاشی ٹیم کی بدولت چیلنجز پر قابو پا رہی ہے۔عمران خان نے کہا کہ انصاف کے نظام کو بہتر بنانے پرکام کر رہے ہیں، اس حوالے سے موجودہ چیف جسٹس کے اقدامات قابل تعریف ہیں، ہم غریب طبقے کوغربت سے باہرلانا چاہتے ہیں، معاشی مشکلات کے باوجود غربت کے خاتمے کے لیے احساس پروگرام شروع کیا، خواتین کو مرکزی دھارے میں لانے کے لیے اقدامات کر رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے کہاکہ رحیم یار خان ٹرین حادثے پر افسوس ہے اور جاں بحق افراد کے ورثا سے تعزیت کرتا ہوں، زخمیوں کی جلد صحتیابی کے لیے بھی د±عا گو ہیں۔وزیر اعظم عمران خان نے صدر عالمی بینک کی آمد پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ بھرپور تعاون پر ورلڈ بینک کا مشکور ہوں ۔

Scroll To Top