دو بڑی جماعتیں مولانا کو ڈھال کے طور پر استعمال کر رہی ہیں،فردوس عاشق اعوان

  • مولانا فضل الرحمن کے تحفظ کی ذمہ داری حکومت پر ہے، جب تک مظاہرین پرامن رہیں گے، حکومت سہولت دیتی رہے گی
  • ملک میں یکساں اور معیاری تعلیم کا فروغ عمران خان کا مشن ہے، غریبوں اور محروموں کے حقوق کے ضامن احساس پروگرام کے تحت اہل اور حقدار طلباءکو 50 ہزار سکالرشپس دی جائیں گی

اسلام آباد (این این آئی)وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہاہے کہ مولانا فضل الرحمن کے تحفظ کی ذمہ داری حکومت پر ہے۔ایک انٹرویومیں ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ ملک کی دو بڑی جماعتیں مولانا فضل الرحمٰن کو شیلڈ کے طور پر استعمال کر رہی ہیں۔فردوس عاشق اعوان نے بتایا کہ جب تک مظاہرین پرامن رہیں گے، حکومت سہولت دیتی رہے گی۔انہوں نے کہا کہ عوام انصار الاسلام کے کارکنوں کو بھی دیکھ رہی ہے۔ دریں اثناءوزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ ملک میں یکساں اور معیاری تعلیم کا فروغ عمران خان کا مشن ہے، غریبوں اور محروموں کے حقوق کے ضامن احساس پروگرام کے تحت اہل اور حقدار طلباءکو 50 ہزار سکالرشپس دیے جائیں گے۔ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہاکہ غریبوں اور محروموں کے حقوق کے ضامن احساس پروگرام کے تحت اہل اور حقدار طلباءکو 50 ہزار سکالرشپس دیے جائیں گے۔ انہوںنے کہاکہ یہ وظائف ان خاندانوں کے طلباءمیں تقسیم کئے جائیں گے جن کی آمدن 45000 روپے سے کم ہے۔ انہوںنے کہاکہ کم آمدن والے افراد کی سماجی بہبود کے پروگرام کے تحت 50 فیصد کوٹہ خواتین جبکہ دو فیصد کوٹہ معذور طلباءکیلئے مختص ہو گا۔انہوںنے کہاکہ ان وظائف میں کتابوں کی فراہمی، ٹرانسپورٹ، رہائش اوردیگر ضروریات شامل ہوں گی۔ انہوںنے کہاکہ اس کا اطلاق تقریباً 152 تمام سرکاری یونیورسٹیوں پر ہوگا۔

You might also like More from author