مودی کشمیریوں کو محکوم بنانے کیلئے طاقت کا استعمال کرے گا، عمران خان

  • مقبوضہ کشمیر میں 9 لاکھ فوج 8 ملین افراد پر دہشت کیلئے بیٹھی ہے، وادی میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو دنیا دیکھ رہی ہے، مودی اب خوف زدہ ہیں کہ جب کرفیو ہٹادیا جائے گا تو وہاں خون ریزی ہوگی
  • مظلوم کشمیری عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کےلئے یوم کشمیر منایا گیا، سہہ پہر 3 بجے ملک بھر میں سائرن بجائے گئے ، لوگ اپنی جگہوں میں کھڑے ہوگئے ،قومی ترانہ پڑھا گیا،وزیر اعظم عمران خان نے کشمیریوں سے اظہار یک جہتی کےلئے بازو پر کالی پٹی باندھی

اسلام آباد (این این آئی)وزیراعظم عمران خان نے مقبوضہ جموں وکشمیر میں بھارتی فوج کے مظالم کو اجاگر کرتے ہوئے کہا ہے کہ نریندر مودی سمجھ رہے ہیں کشمیریوں کو خاموش کرکے انہیں محکوم بنانے کے اپنے ایجنڈے کو حاصل کرسکیں گے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ قابض مودی سرکار 75 روز سے مقبوضہ کشمیر کا محاصرہ کیے ہوئے ہے۔انہوںنے کہاکہ شیر پر سوار مودی سمجھتے ہیں کہ وہ 9 لاکھ فوج کے ذریعے کشمیریوں کو خاموش کروا کر قبضہ جمانے کے ایجنڈا حاصل کرسکیں گے۔کشمیر میں بھارتی فوجیوں کی موجودگی پر انہوں نے کہا کہ 9 لاکھ فوجی دہشت گردی سے نمٹنے کے لیے نہیں ہے بلکہ 80 لاکھ کشمیریوں کو دہشت زدہ کرنے کے لیے درکار ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو دنیا دیکھ رہی ہے، مودی اب خوف زدہ ہیں کیونکہ وہ جانتے ہیں کہ جب کرفیو ہٹادیا جائے گا تو وہاں خون ریزی ہوگی جو کشمیریوں کو محکوم بنانے کا واحد راستہ ہوگا۔دریں اثناءوزیر اعظم عمران خان نے مقبوضہ جموں و کشمیر کے کشمیریوں سے اظہار یک جہتی کے لئے بازو پر کالی پٹی باندھی۔مظلوم کشمیریوں سے اظہار یک جہتی کے لئے وزیرِ اعظم آفس میں دن تین بجے سائرن بجایا گیا اور پانچ منٹ کے لئے خاموشی اختیار کی گئی۔ملک کے دیگر حصوں کی طرح سائرن بجنے کے ساتھ ہی افسران و سٹاف نے کھڑے ہوکر کشمیری بھائیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کا مظاہرہ کیا

Scroll To Top