اقوام متحدہ کی قراردادوں کے باوجود بھارت کشمیر پر قابض ہے، مہاتیر محمد

  • ملائشین وزیر اعظم نے کشمیر سے متعلق اپنا بیان واپس لینے کا بھارتی مطالبہ مسترد کردیا،اپنی بات پر قائم ہوں اور نریندر مودی سے ملاقات میں بھی یہی بات دوہرائی تھی
  • مہاتیر محمد نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اپنے خطاب میں مقبوضہ کشمیر میں جاری مظالم خصوصی طورپر اجاگر کیا تھا

کوالا لمپور(مانیٹرنگ ڈیسک) ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اپنی تقریر میں قابض بھارتی فوجیوں کے کشمیریوں پر مظالم اور قبضے سے متعلق بیان کو واپس لینے کے دباو کو مسترد کردیا۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد نے بھارتی حکومت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر سے متعلق اپنے ریمارکس کو واپس لینے کے مطالبے پر کہا ہے کہ میں اپنی بات پر قائم ہوں اور حال ہی میں وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات میں بھی وہی بات دوہرائی تھی اور جہاں جہاں موقع ملا، کشمیریوں کی آواز بنوں گا۔ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے باوجود بھارت کشمیر پر قابض ہے،مہاتیر محمد نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اپنے خطاب میں مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے اقدام کو کشمیریوں پر حملہ اور ناجائز قبضہ قرار دیتے ہوئے دنیا کے سامنے بھارتی مظالم کو بے نقاب کیا تھا اور اقوام متحدہ سے اپنی رٹ قائم کرتے ہوئے کشمیر سے متعلق قراردادوں پر عمل درآمد کرنے پر زور دیا تھا۔وزیراعظم مہاتیر محمد کے عالمی فورم پر مسئلہ کشمیر اٹھانے پر مودی سرکار بلبلا اٹھی اور وزارت خارجہ کے ترجمان نے ملائیشیا سے بیان واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ کشمیر بھارت کا اندرونی مسئلہ ہے جس پر ملائیشیا کو مداخلت کرنے کی ضرورت نہیں

Scroll To Top