پاکستان سعودی عرب کے ساتھ کھڑا ہے، عمران خان

  • وزیراعظم پاکستان کا سعودی ولی عہد سے ٹیلی فونک رابطہ
  • وزیر اعظم کی سعودی عرب میں تیل تنصیبات پر حملے کی شدید مذمت، تخریب کاری سے برادر ملک کی سیکیورٹی اور عالمی معیشت کو خطرہ ہے، سعودی عرب کے امن اور عالمی معیشت کو نشانہ بنانےکی ہر کوشش کا مقابلہ کیا جائے گا،عمران خان
  • دونوں رہنماو¿ں کا خطے کی تیزی سے تبدیل ہوتی صورتحال پر تبادلہ خیال، سعودی عرب تخریب کاروں کا مقابلہ کرنے کی پوری صلاحیت رکھتا ہے، سعودی وعلی عہد شہزادہ محمد بن سلمان

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ٹیلی فونک رابطہ کیا اور سعودی عرب میں تیل تنصیبات پر حملے کی مذمت کی ہے۔سعودی پریس ایجنسی کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا، وزیر اعظم نے سعودی ولی عہد سے سعودی عرب میں تیل تنصیبات پر حملے کی مذمت کی اور کہا کہ پاکستان سعودی عرب کے ساتھ کھڑا ہے۔ دونوں رہنماو¿ں میں سعودی عرب میں حالیہ تخریب کاری کے واقعات پر تبادلہ خیال ہوا۔عمران خان نے شہزاد محمد بن سلمان سے گفتگو میں کہا کہ تخریب کاری سے سعودی عرب کی سیکیورٹی اور عالمی معیشت کو خطرہ ہے جب کہ ولی عہد کا کہنا تھا کہ سعودی عرب تخریب کاروں کا مقابلہ کرنے کی پوری صلاحیت رکھتا ہے۔واضح رہے کہ چند روز قبل سعودی عرب کے شہر بقیق میں تخریب کاروں کی جانب سے تیل کے کنوو¿ں اور پراسسنگ پلانٹ پر ڈرون حملے کیے گئے تھے جس کے نتیجے میں شدید مالی نقصان ہوا جب کہ امریکا نے اس حملے کا الزام ایران پر لگایا تھا تاہم ایرانی حکومت نے یہ الزام مسترد کردیا

Scroll To Top