مودی جمہوری رہنما نہیں، دور حاضر کا یزید بن چکا ، عثمان بزدار

  • عزاداروں کی سہولت اور سکیورٹی کےلئے بہترین اقدامات اٹھائے گئے، شہدائے کربلا کی عظےم قربانےوں نے دےن اسلام کے آفاقی اصولوں قےامت تک کےلئے زندہ کردےا
  • شہیدوں کا پاکیزہ لہو رنگ لائےگا، سفاک مودی کا نام و نشان مٹ جائے گا،وزےراعلیٰ پنجاب کا ےوم عاشور کے موقع پر پےغام

لاہور(اےن اےن آئی) وزےراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے کہا ہے کہ کربلا کا واقعہ حق بات پر ڈٹ جانے کا درس دیتا ہے، نواسہ رسول حضرت امام حسینؓ نے جان دے دی، باطل کے سامنے سر نہ جھکایا۔واقعہ کربلا میں صبر، ایثار، حق پر ڈٹ جانے کا سبق پوشیدہ ہے۔ تاریخ میں شہید زندہ رہتے ہیں، ظالم کا نام و نشان مٹ جاتا ہے۔ ظالم مودی نے مقبوضہ کشمیر میں سفاکیت اور بربریت برپا کر رکھی ہے۔ مودی جمہوری رہنما نہیں، دور حاضر کا یزید بن چکا ہے۔ مودی سن لے! اسلام کی تاریخ قربانیوں سے بھری ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں ہزاروں شہید جان کی قربانی دے کر کربلا کی کی عظیم ترین روایت کو نبھا رہے ہیں۔شہیدوں کا پاکیزہ لہو رنگ لائے گا اور سفاک مودی کا نام و نشان مٹ جائے گا۔ وزےراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدارنے ےوم عاشور کے موقع پراپنے پےغام مےں کہا کہ حضرت امام حسینؓ اور دیگر شہدائے کربلا کا غم تاقیامت باقی رہنے والا اثاثہ ہے۔ شہدائے کربلا کی عظےم قربانےوں نے دےن اسلام کے آفاقی اصولوںصبر،برداشت اورقربانی کو قےامت تک کےلئے زندہ کردےا ہے۔کربلاکے مےدان مےںحق و باطل کا معرکہ مسلمانوں کو ظلم اور بربریت کےخلاف جہاد کرنے کا درس دیتاہے۔نواسہ رسول حضرت امام حسےن ؓنے انسانےت کی عظمت اوراسلام کی سربلندی کےلئے لازوال قربانی دی اور حضرت اما م حسےنؓ اور ان کے ساتھےوں کی مےدان کربلا مےں دی گئی لازوال قربانےاں ہمارے لئے مشعل راہ ہےں ۔ شہدائے کربلاکا سفر،جرا¿ت اورعظےم قربانےاں رہتی دنےا تک مظلوم قوموں کوحوصلہ اور ولولہ مہےا کرتی رہےں گی۔نواسہ رسول نے اپنے کردار اورعمل سے حق کی آواز کو بلند کرنا اورانسانی اقدار کاتحفظ سکھاےا۔انہوںنے کہا کہ حضرت امام حسےن ؓکی جدوجہد ظلم کےخلاف سےنہ سپر ہونے کاابدی پےغام ہے اورےوم عاشور کے موقع پر ہمےں اپنی زندگےوں کو حقےقی معنوں مےںحضرت امام حسےنؓکی روشن تعلےمات کے مطابق عمل پےرا ہونے کااعادہ کرنا ہے۔حضرت سید علی بن عثمان الہجوےری ؒالمعروف حضرت داتا گنج بخشؒ کے مزار کو سالانہ غسل مبارک دےنے کی تقرےب منعقد ہوئی ۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار،صوبائی وزراءپیر سید سعید الحسن شاہ ،میاں اسلم اقبال، سردار آصف نکئی، اجمل چیمہ، مشیر عون چوہدری، معاون خصوصی سید رفاقت علی گیلانی، رکن پنجاب اسمبلی نذیر چوہان،سیکرٹری اوقاف، کمشنر لاہور ڈویژن، سی سی پی او لاہور اورعقےدت مندوں کی بڑی تعداد نے مزار کو سالانہ غسل مبارک دینے کی تقریب میں شرکت کی۔وزےراعلیٰ سردار عثمان بزداراوردےگر شخصےات نے حضرت سید علی بن عثمان الہجوےریؒ المعروف حضرت داتا گنج بخشؒ کے مزار کو عرق گلاب سے غسل دےا۔ وزےراعلیٰ نے مزار پرپھولوں کی چادر چڑھائی۔وزےراعلیٰ سردار عثمان بزدار اورسےنکڑوں عقےدت مندوں نے اس موقع پر ملک کی ترقی و خوشحالی اور استحکام کےلئے دعا کی۔مقبوضہ کشمیر کے عوام کی بھارتی تسلط سے آزادی کیلئے بھی خصوصی دعا کی گئی۔ وزیراعلیٰ نے اس موقع پر کہا کہ حضرت داتا گنج بخشؒ سمیت تمام بزرگان دین نے برصغیر میں امن و آشتی کا درس دیا اور اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ بزرگان دین کے فیوض و برکات سے مقبوضہ کشمیر کو آزادی عطا فرمائیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ یوم عاشور پر امن وامان کی فضا یقینی بنانے کےلئے ہر ممکن اقدام کیا گیا ہے۔ مجالس اور جلوسوں کی سکیورٹی کےلئے چار درجاتی حصار بنانے کیلئے ہدایات دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے عزاداروں کی سہولت اور سکیورٹی کےلئے بہترین اقدامات کئے ہیں۔ دشمن ملک میں عدم استحکام پیدا کرنے کی سازش کر رہا ہے اور سب نے مل کر دشمن کے مذموم عزائم کو ناکام بنانا ہے۔اتحاد، اتفاق اور مذہبی ہم آہنگی کا فروغ وقت کا تقاضاہے۔انہوں نے کہا کہ یوم عاشور پر وضع کردہ سکیورٹی پلان پر 100فیصد عملدرآمدےقےنی بناےا جائے گا۔کابینہ کمیٹی برائے امن وامان وضع کردہ پلان پر عملدرآمد کی باقاعدگی سے مانیٹرنگ جاری رکھے۔مجالس اور جلوسوں کے اختتام پذیر ہونے تک پولیس فورس اور متعلقہ عملہ ڈیوٹی پر موجود رہے۔موجودہ حالات میں کوتاہی کی کوئی گنجائش نہیں۔ گزشتہ برسوں سے بڑھ کر سکیورٹی انتظامات کئے گئے ہیں۔ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی برداشت نہیں کی جائے گی۔ فرائص کی ادائیگی میں مصروف پولیس فورس اور دیگر عملے کےلئے کھانے پینے کے بہترین انتظامات ہونے چاہئےں۔ تھانہ کلچر کو تبدےل کرےںگے،پولیس تشدد کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیرصدارت وزیراعلیٰ آفس میں اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا۔ وزیراعلیٰ نے پولےس نظام مےں اصلاحات کے عمل کو مزےد تےز کرنے کی ہداےت کرتے ہوئے کہا کہ پولےس کے روےوں مےں بہتری لاکرتھانہ کلچر کو تبدےل کرنا ہوگا۔پولیس نظام میں اصلاحات وقت کا اہم تقاضا ہے۔حوالات مےں بند ملزموں سے ماورائے قانون کوئی اقدام اورپولیس تشدد کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ پولےس کو سائلین کے ساتھ خندہ پےشانی سے پےش آنا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب پولےس کو عصرحاضر کے جدےد تقاضوں سے ہم آہنگ کےا جائے گا۔سابق حکومتوں نے پولےس کو سےاسی مقاصد کےلئے استعمال کےا۔برسوں سے جاری فرسودہ نظام کو تبدیل کرکے پولیس کو پبلک فرینڈلی بنائیں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ تحرےک انصاف کی حکومت پولےس نظام کو بہتر بنانے کےلئے ہر ضروری اقدام اٹھا رہی ہے ۔ موجودہ خامےوں کو درست کر کے عوام دوست پولےس نظام لائےںگے۔ تھانہ کلچر میں تبدیلی کے لئے جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے منفرد ا قدامات کئے جا رہے ہیں۔ تھانوں میں کیمروں کے ذریعے حوالات اور تفتیشی عمل کی نگرانی کی جارہی ہے۔ پولیس کے اندر احتساب کے نظام کو مزید موثر بنایا جا رہاہے اور جیل مینول کو بھی تبدیل کررہے ہیں۔ صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت، چیف سیکرٹری، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ، سیکرٹری وزیراعلیٰ پنجاب ، سیکرٹری قانون اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

Scroll To Top