کھلے آسمان کے نیچے کھڑے ہو کر بلند آواز میں کہو۔۔۔ ” ابوجہل مردہ باد۔۔۔ ایم کیو ایم مردہ باد۔۔۔“

الطاف حسین کے خلاف فاروق ستار کی ایم کیو ایم کی بغاوت ویسی ہی تو نہیں جیسی اپوزیشن سید خورشید شاہ ` میاں نوازشریف کی حکومت کی کرتے ہیں۔۔۔؟
کہیں یہ سارا کھیل بھی ” مک مکا“ کا تو نہیں جسے ” نورا کشتی “ کے عنوان سے بھی جانا اور سمجھا جاتا ہے۔۔۔؟
سندھ اسمبلی میں ایم کیو ایم پاکستان نے الطاف حسین کے خلاف قرارداد منظور کرائی۔۔۔ جواباً ندیم نصرت نے لندن سے فرمان جاری کردیا کہ فاروق ستار اینڈ کمپنی کا ایم کیو ایم سے کوئی تعلق نہیں۔۔۔انہوں نے کہا۔۔۔
” ایم کیو ایم اور الطاف حسین لازم و ملزوم ہیں۔۔۔“
یوں لگا کہ ایک ہی دن میں لندن کی ایم کیو ایم اور کراچی کی ایم کیو ایم نے ” جنگ عظیم جیسی بڑی جنگ “ پوری کی پوری لڑلی ہے۔۔۔
لیکن جو لوگ قلابازیاں کھانے میں مہارت رکھتے ہوںکیا ان کی کسی بھی بات کا اعتبار کیا جاسکتا ہے۔۔۔؟
سندھ اسمبلی میں خواجہ اظہار الحسن اور فیصل سبزواری سمیت ایم کیو ایم پاکستان کے اکابرین نے ایک طرف نہایت جوشیلے انداز میں الطاف حسین کو برُا بھلا کہا اور دوسری طرف الطاف حسین کی ہی ایم کیو ایم کا ساتھ برسہا برس تک نبھانے کی دلدوز داستان بھی سنائی۔۔۔
یہ کھلا تضاد کیوں۔۔۔؟
اگر اِن لوگوںنے ابوجہل کا ساتھ چھوڑنے کا آ ہنی عزم کر ہی لیا ہے تو پورا اسلام کیوں قبول نہیں کررہے۔۔۔؟ کیوں ایم کیو ایم کا بت سامنے رکھ کر عقیدتوں کا ایک نیا مندر بسانا چاہتے ہیں۔۔۔؟
انہیں چاہئے کہ کعبے سے ابوجہل کے تمام بت نکال باہر پھینکیں۔۔۔ اور کھلے آسمان تلے کھڑے ہو کر محمد کے خدا سے کہیں۔۔۔
” ہم نے باطل سے سارے رشتے توڑ ڈالے ہیں۔۔۔ گواہ رہنا کہ ہم اب ابوجہل کے ساتھ نہیں۔۔۔ ہماری تلواریں میدانِ بدر میں ابوجہل اور اس کے ساتھیوں کی گردنیں اڑانے کے لئے بے نیام ہوں گی۔۔۔ الطاف حسین مردہ باد۔۔۔ ایم کیو ایم مردہ باد۔۔۔پاکستان زندہ باد۔۔۔۔“

Scroll To Top