آرمی چیف کی مدت ملازمت میں 3 سال کی توسیع :قومی سطح پر جنرل باجوہ کی خدمات کا اعتراف

  • وزیراعظم آفس سے جاری نوٹی فکیشن کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے آرمی چیف کو موجودہ میعاد کی تکمیل کے بعد 3 سال کےلئے دوبارہ پاک فوج کا سربراہ مقرر کردیا ہے، توسیع کا فیصلہ خطے کے سکیورٹی ماحول کے تناظر میں کیا گیا
  • توسیع وقت کی ضرورت ہے،علی زیدی ، فیصلہ خوش آئند ہے،فیصل واوڈا،فیصلہ موجودہ سیکیورٹی حالات کی سنجیدگی کا ادراک ہے، فواد چوہدری، فیصلہ جنرل باجوہ کی قائدانہ صلاحیتوں اور حب الوطنی کا اعتراف ہے ، نعیم الحق

راولپنڈی (این این آئی)وزیر اعظم عمران خان نے پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں 3 سال کی توسیع کردی ۔ پیر کو وزیراعظم آفس سے جاری نوٹی فکیشن کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے آرمی چیف کو موجودہ میعاد کی تکمیل کے بعد 3 سال کےلئے دوبارہ پاک فوج کا سربراہ مقرر کردیا ہے۔بیان کے مطابق آرمی چیف کی مدت میں توسیع کا فیصلہ خطے کے سکیورٹی ماحول کے تناظر میں کیا گیا ہے۔خیال رہے کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 29 نومبر 2016 پاک فوج کی قیادت سنبھالی تھی اور انہوںنے رواں سال نومبر میں ریٹائر ہونا تھامدت ملازمت میں توسیع کے بعد جنرل قمر جاوید باجوہ نومبر 2022تک پاک فوج کے سربراہ رہیں گے ۔یاد رہے کہ جنرل قمر جاوید باجوہ پاک فوج کی کمان سنبھالنے سے قبل جنرل ہیڈ کوارٹرز (جی ایچ کیو) میں انسپکٹرجنرل آف ٹریننگ اینڈ ایویلیوایشن تعینات رہے، یہ وہی عہدہ ہے جو آرمی چیف بننے سے قبل جنرل راحیل شریف کے پاس بھی تھا۔ جنرل قمر جاوید باجوہ آرمی کی سب سے بڑی 10 ویں کور کو کمانڈ کرچکے ہیں جو لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کی ذمہ داری سنبھالتی ہے۔جنرل قمر جاوید باجوہ کینیڈین فورسز کمانڈ اینڈ اسٹاف کالج (ٹورنٹو)، نیول پوسٹ گریجویٹ یونیورسٹی مونٹیری (کیلی فورنیا)، نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آباد کے گریجویٹ ہیں۔جنرل قمر جاوید باجوہ نے 16 بلوچ رجمنٹ میں 24 اکتوبر 1980 کو کمیشن حاصل کیا۔ ادھر وفاقی علی زیدی کا کہنا تھا کہ آرمی چیف کی توسیع وقت کی ضرورت تھی۔فاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واڈا نے کہا کہ وزیراعظم کا آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کا فیصلہ خوش آئند ہے، پاکستان کے موجوہ حالات میں آرمی چیف وقت کی ضرورت ہیں۔ وفاقی وزیر برائے ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کیے گئے ٹوئٹ میں کہا کہ آرمی چیف کی عہدے میں توسیع کا نوٹیفیکیشن موجودہ سیکیورٹی حالات کی سنجیدگی کا ادراک ہے۔وزیر اعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق نے ٹوئٹ میں کہا ہے کہ جنرل باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع کا خیرمقدم کرتے ہیں.انھوں نے کہا کہ جنرل باجوہ کی قائدانہ صلاحیتیں، حب الوطنی وقت کی اہم ضرورت ہیں، قوم اعتماد کرسکتی ہے کہ مسلح افواج کی قیادت مضبوط ہاتھوں میں ہےپاکستان پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنماء اور سابق وزیراعظم راجا پرویز اشرف نے کہا ہے کہ آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع اچھا فیصلہ ہے، آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع حالات کے مطابق کی گئی،اللہ کرے یہ فیصلہ قوم اور ملک کیلئے مبارک ہو۔

Scroll To Top