حکومت کا ایک سال مظلوم کشمیریوں کے نام کرتے ہیں،فردوس عاشق اعوان

  • مسئلہ کشمیرحکومت کی اولین ترجیح ہے، قومی ایجنڈے پرسب ایک ہیں، مسئلہ کشمیر کے لیے وزیراعظم نے حکومتی کارکردگی سے متعلق خطاب منسوخ کیا
  • کشمیر معاملے پر قومی بیانیے کو سپورٹ کر نے پر اپوزیشن کی شکر گزار ہوں ،سیکیورٹی کونسل کے بند کمرہ اجلاس کے بعد اوپن سیشن بلانے کےلئے کوششوں سے آگاہ کرتے رہیں گے

اسلام آباد (این این آئی)وزیر اعظم کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہاہے کہ حکومت کا ایک سال مکمل ہوگیا ہے، دن مظلوم کشمیریوں کے نام کرتے ہیں،مسئلہ کشمیرحکومت کی اولین ترجیح ہے، قومی ایجنڈے پرسب ایک ہیں، کشمیر کاز کے لیے وزیراعظم نے حکومتی کارکردگی سے متعلق اپنا خطاب منسوخ کیا،سیاسی معاملات پسِ پشت ڈالے،کشمیر کا ز پر قومی بیانیے کو سپورٹ کر نے پر اپوزیشن کی شکر گزار ہوں ،سیکیورٹی کونسل کے بند کمرہ اجلاس کے بعد اوپن سیشن بلانے کےلئے کوششوں سے میڈیا کوآگاہ کرتے رہیں گے، 22سالہ انتھک محنت کے بعد عمران خان کو انتخابی کامیابی ملی، عمران خان نے ایک سال میں نئے پاکستان کی تکمیل کی ہے، ہمارایک سال کا سفراستحکام پاکستان کاسفرتھا، آئندہ سال تعمیرپاکستان کا سال ہوگا، آئندہ پورے ہفتے روزانہ ایک وزارت سال بھرکی کارکردگی میڈیا کےسامنے پیش کرے گی،بجٹ کا پہلا فیز گزرنے کے بعد میڈیا ہاﺅسز کے واجبات کی ادائیگی کے وزیراعظم کے وعدے کو پورا کردیا جائےگا۔ اتوار کو فردوس عاشق اعوان حکومت نے ایک سال مکمل ہونے پر یہاں منعقدہ خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ مسئلہ کشمیرحکومت کی اولین ترجیح ہے، قومی ایجنڈے پرسب ایک ہیں، وزیراعظم عمران خان مسلسل مظلوم کشمیریوں کا مقدمہ لڑرہے ہیں۔فردوس عاشق اعوان نے کشمیریوں پر ہونے والے مظالم سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ ریاست میں جو بھی ظلم کےخلاف آواز اٹھا رہا ہے وہ بھارتی فوج کی ریاستی دہشتگردی کا نشانہ بن رہا ہے، بھارت نے مقبوضہ کشمیرکو دنیا کی سب سے بڑی جیل میں تبدیل کردیا ہے، قابض انتظامیہ کےلاک ڈاﺅن کی وجہ سے بچے دودھ اور بیمار دواﺅں سے محروم ہیں۔فردوس عاشق اعوان نے حزبِ اختلاف جماعتوں سے متعلق کہا کہ اپوزیشن کی بھی شکرگزارہوں کہ کشمیر کاز پرقومی بیانیے کوسپورٹ کیا۔فردوس عاشق اعوان نے پی ٹی آئی کے چیئر مین اور وزیرِ اعظم عمران خان سے متعلق کہا کہ 22سالہ انتھک محنت کے بعد عمران خان کو انتخابی کامیابی ملی، عمران خان نے ایک سال میں نئے پاکستان کی تکمیل کی ہے، عمران خان نے قائد اعظم کے سپاہی کے طور پر مخالفین کے تمام اندازوں کو غلط ثابت کیا ہے۔انہوں نے نئے پاکستان کے ویڑن کو ایک سال مکمل ہونے پر کہا کہ نئے پاکستان میں حکمرانوں نہیں عوامی مفادات کی حفاظت کی جاتی ہے، ہمارایک سال کا سفراستحکام پاکستان کاسفرتھا، آئندہ سال تعمیرپاکستان کا سال ہوگا، آئندہ پورے ہفتے روزانہ ایک وزارت سال بھرکی کارکردگی میڈیا کےسامنے پیش کرے گی۔فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ حکومت نے ایسے بیج بوئے جن کاثمرعوام کی ترقی اورخوشحالی کی شکل میں سامنے آئےگا۔انہوں نے کہا کہ حکومت اظہارِ رائے کی آزادی پرمکمل یقین رکھتی ہے، حکومت میڈیا کی مثبت تنقید کوخوش آمدید کہتی ہے،وزارت اطلاعات میں سوشل میڈیا کا ایک شعبہ قائم کیا گیا ہے۔فردوس عاشق اعوان کا میڈیا کی حالیہ خستہ حالی سے متعلق کہنا تھا کہ بجٹ کا پہلا فیز گزرنے کے بعد میڈیا ہاﺅسز کے واجبات کی ادائیگی کے وزیراعظم کے وعدے کو پورا کردیا جائے گا۔فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کشمیر کاز کے لیے وزیراعظم نے حکومتی کارکردگی سے متعلق اپنا خطاب منسوخ کیا،سیاسی معاملات پسِ پشت ڈالے۔انہوں نے اپنی حکومت کی خارجہ پالیسی کو کامیاب قرار دیتے ہوئے کہا کہ کامیاب سفارتکاری سے بھارت کی مکار چالیں ناکام بنائیں، سیکیورٹی کونسل کے بند کمرہ اجلاس کے بعد اوپن سیشن بلانے کےلئے کوششوں سے میڈیا کوآگاہ کرتے رہیں گے۔معاون خصوصی نے کہاکہ ہم سب میڈیا کے ذریعے عوام کو جوابدہ ہیں، چند افراد اور ایلیٹ کلاس عوام کے حقوق چھینتے رہے،ہر ادارے میں اصلاحات کی ضرورت تھی، عمران خان نے ہر ادارے میں ریفارمز متعارف کرائیں۔ انہوںنے کہاکہ ریلوے خسارے میں ملا، انتھک محنت سے پاو¿ں پر کھڑا کیا،انصاف اور احساس تک معاشرے میں تبدیلی نہیں آ سکتی، احساس پروگرام کیلئے 152 ارب روپے مختص کیے ہیں۔انھوں نے مختلف محکموں کی کارکردگی بیان کرتے ہوئے کہا کہ 175 ممالک کیلئے آسان ویزہ پالیسی متعارف کرائی گئی، سمگلنگ کی روک تھام کیلئے وزارت داخلہ نے مربوط اقدامات کیے۔

Scroll To Top