پاک فوج کا دشمن کو دندان شکن جواب ، 5بھارتی فوجی جہنم واصل ، کئی زخمی، بنکرز تباہ

  • لائن آف کنٹرول پر بلااشتعال فائرنگ سے پاک فوج کے3 جوان شہید ،شہدا میں نائیک تنویر، لانس نائیک تیمور، سپاہی ر مضان شامل، فائرنگ کا تبادلہ وقفے وقفے سے جاری رہا، بھارتی ہتھکنڈے کشمیر سے توجہ ہٹا نے کی کوشش ہے، آئی ایس پی آر
  • بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کی دفترخارجہ طلبی ، خلاف ورزیوں پرشدید احتجاج ،بھارتی خلاف ورزیوں سے خطے میں اسٹریٹجک غلطی ہوسکتی ہے، بھارتی فوج ایل اوسی کااحترام کرے،دفتر خارجہ

راولپنڈی(صباح نیوز)بھارتی فوج کی جانب سے ایل او سی پر بلااشتعال فائرنگ سے پاک فوج کے 3 جوان شہید ہوگئے۔ پا ک فوج کی بھرپور جوابی کارروائی سے پانچ بھارتی فوجی ہلاک اور کئی بھارتی بنکر تباہ ہوگئے ،پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر )کے مطابق بھاری فوج کی جانب ایل او سی پر سیز فائز معاہدے کی خلاف ورزیوں میں اضافہ ہوگیا ہے ۔ بھارتی فوج کی فائرنگ سے پاک فوج کے 3 جوان شہید ہوگئے۔شہدا میں نائیک تنویر، لانس نائیک تیمور، سپاہی ر مضان شامل ہیں،نائیک تنویر کی عمر 37 سال تھی اور وہ گزشتہ 14 سال سے پاک فوج میں فرائض سرانجام دے رہے تھے ان کا تعلق خانیوال سے تھا ان کا ایک بیٹا اور دو بیٹیاں ہیں، لانس نائیک تیمور کی عمر 26 سال تھی وہ گزشتہ 8 سال سے پاک فوج میں فرائض سرانجام دے رہے تھے ان کا تعلق لاہور سے تھا ان کی ایک ہی بیٹی ہے۔ جبکہ سپاہی رمضان کی عمر 20 سال تھی وہ گزشتہ تین سال سے پاک فوج میں خدمات انجام دے رہے تھے ان کا تعلق خانیوال سے تھا اور شادی شدہ تھے ۔پاک فوج نے بھرپور جوابی کارروائی کرتے ہوئے بھارت کے 5 فوجی اہلکاروں کو بھی ہلاک کردیا اور کئی بھارتی بینکرز بھی تباہ ہوگئے۔ ۔آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ فائرنگ کا تبادلہ وقفے وقفے سے جاری ہے ۔ بھارت ایسے اقدامات کشمیر سے توجہ ہٹا نے کیلئے کر رہا ہے۔ دریں اثناءپاکستان نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو دفترخارجہ طلب کر کے ایل او سی کی خلاف ورزیوں پرشدید احتجاج کیا ہے.تفصیلات کے مطابق دفتر خارجہ نے موقف اختیار کیا ہے کہ بلا اشتعال فائرنگ کےنتیجے میں 3 فوجی اہل کار شہید ہوئے.دفتر خارجہ کے مطابق بھارت کی جانب سے لیپا اور بٹل سیکٹرمیں بلا اشتعال فائرنگ کی گئی، فائرنگ سے نائیک تنویر،لانس نائیک تیمور، سپاہی رمضان شہید ہوئے.بھارتی فوج کی جانب سے لگاتار سیزفائرکی خلاف ورزی کی جارہی ہے، سیز فائرکی خلاف ورزی سے خطے کے امن کو خطرات لاحق ہیں.دفتر خارجہ نے واضح کیا ہے کہ بھارتی خلاف ورزیوں سے خطےمیں اسٹریٹجک غلطی ہوسکتی ہے، بھارتی فوج ایل اوسی کااحترام کرے.پاکستان کی جانب سے یہ بھی مطالبہ کیا گیا کہ بھارتی فوج اقوام متحدہ ملٹری آبزرورگروپ کو کردار ادا کرنے دے.خیال رہے کہ آج مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت کی جانب سے کرفیو کا مسلسل گیارہواں روز ہے، جنت نظیر وادی دنیا کی سب سے بڑی جیل کی صورت اختیار کرگئی۔بھارتی حکومت کی جانب سے مقبوضہ وادی کی خصوصی حیثیت آرٹیکل 370 اور 35 اے کے خاتمے کے کشمیر میں کرفیو نافذ ہے۔نہتے اور آزادی کی آواز اٹھانے والے حریت پسند کشمیریوں کے لیے جنت نظیر وادی دنیا کی سب سے بڑی جیل کی صورت اختیار کرگئی کیونکہ مسلسل کرفیو کے باعث وہاں اشیائے خوردونوش، ادویات سمیت غذائی اجناس کی شدید قلت پیدا ہوگئی۔

Scroll To Top