وطن کو عظیم تر بنانے کیلئے پوری قوم کو متحرک کرنا ہوگا، عثمان بزدار

  • یہ نیا پاکستان ہے،اب باتیں بنانے یا سستی کی کوئی گنجائش نہیں، ہر افسرشفافیت،فعالیت،ایمانداری،خود احتسابی اورملک و قوم کی خوشحالی کیلئے کام کرے
  • عوام کی فلاح وبہبود،گڈ گورننس اورمالی شفافیت کیلئے بھر پور کردارادا کرنے والے افسروں پر ناز ہے، وزیر اعلیٰ پنجاب کا خطاب


لاہور(الاخبار نیوز)وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان احمد خان بزدار نے کہاہے کہ اب باتیں بنانے یا سستی کی کوئی گنجائش نہیں ہے، ہر افسرشفافیت،فعالیت،ایمانداری،خود احتسابی اورملک و قوم کی خوشحالی کیلئے کام کرے۔ انہوں نے یہ بات سول سیکرٹریٹ لاہور کے دربارہال میں سرکاری افسروں سے خطاب میں کہی۔سردار عثمان احمد خان بزدار نے کہا کہ وطن کو عظیم تر بنانے کیلئے پوری قوم کو متحرک کرنا ہوگا۔عوام کی فلاح وبہبود،گڈ گورننس اورمالی شفافیت کیلئے بھر پور کردارادا کرنے والے افسروں پر ناز ہے۔وزیراعلی پنجاب نے کہا کہ کپتان کے لئے ٹیم کا انتخاب بے حد اہمیت کا حامل ہوتا ہے۔میری ٹیم میں لوگ سفارش کی بنا پر نہیں آئے بلکہ خداداد صلاحیتوں کی بدولت ٹیم کا حصہ بنے ہیں۔عثمان احمد خان بزدار نے کہا کہ حکومت پنجاب کی نیک نامی اورساکھ بنانے میں کردارادا کرنے والوں کو فراموش نہیں کرسکتا،پنجاب ملک کے دیگر صوبوں میں ہر لحاظ سے نمایاں نظر آتا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی اچھی بری ساکھ بنانے میں پبلک سرونٹ کا کردارکلید ی اہمیت کا حامل ہوتا ہے۔ملازمین محنت اورایمانداری کا مظاہرہ کرے تو گڈگورننس کا تاثر ابھرتا ہے اوررائے عامہ حکومت کے حق میں ہوجاتی ہے۔عوامی فلاح وبہبود کے منصوبے اوربہتر ڈلیوری پبلک سرونٹ کی محنت کی مرہون منت ہے۔پنجاب کے وزیر اعلی نے کہا کہ پاکستان کی سول سروس پیشہ ورانہ مہارت اورفعالیت کے لحاظ سے آج بھی بہترین ہے۔سروس ڈلیور ی کے امور کو بہتر بنانے کیلئے سول افسروں کے پے پیکیج پر توجہ دے رہے ہیں۔سردار عثمان احمد خان بزدار نے کہا کہ مالی مشکلات کے باوجود پولیس،ڈاکٹروں،انجینئروں اورسول ایڈمنسٹریشن کو پیکیج دیں گے۔ یقینی گڈگورننس کیلئے ڈاکٹروں، انجینئروں،پولیس اورایڈمنسٹریشن کو مراعات دے رہے ہیں۔اس موقع پر چیف سیکرٹری پنجاب نے بھی خطاب کیا انہوں نے کہا کہ سرکاری افسروں کیلئے جتنے موزوں حالات آج ہیں پہلے نہیں تھے۔سرکاری افسران حکومت کے ویڑن کو آگے بڑھانے کیلئے آپ کی توقعات پر پورا اتریں گے۔اجلاس سے سیکرٹری فاریسٹ،سیکرٹری اطلاعات و ثقافت،کمشنرز اورڈی سی لاہور نے بھی خطاب کیا۔

Scroll To Top