نیب کی بڑی کارروائی:شہباز فیملی کے16بینکوں میں 150 اکاو¿نٹس منجمد

  • شہبازشریف ، نصرت شہباز ، حمزہ شہباز، سلیمان شہباز، رابعہ عمران، عائشہ ہارون ، عمران یوسف،مقصود اینڈ کمپنی، نثاراحمد اور مہر النسا ءحمزہ کے اکاو¿نٹس متاثرین میں شامل ،ان اکاو¿نٹس کے ذریعے کوئی لین دین نہیں کرسکیں گے
  • دوسری جانب نواز ، شہبازکے تیسرے بھائی کی اولاد بھی نیب کے ریڈار پر ، عباس شریف مرحوم کے بیٹے یوسف عباس23 جولائی کو طلب، چوہدری شوگر ملز کے حصص کی خرید و فروخت اور مالکان بارے تمام ریکارڈ ہمراہ لانے کی ہدایت

لاہور: قومی احتساب بیورو (نیب) کے حکم پرشہباز شریف فیملی کے 150 بینک اکاو¿نٹس منجمد کر دیے گئے.تفصیلات کے مطابق نیب نے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے خلاف بڑی کارروائی کرتے ہوئے ان کے 16 بینکوں میں موجود 150 اکاو¿نٹس منجمد کردیے.نیب کے اس اقدام کے بعد شہباز شریف فیملی منجمد اکاو¿نٹس کے ذریعے کوئی لین دین نہیں کرسکے گی. حالیہ کارروائی میں حمزہ شہباز، رابعہ عمران، عائشہ ہارون کے اکاو¿نٹس منجمد کئے گئے ہیں۔نیب نے عمران یوسف،مقصود اینڈ کمپنی، نثاراحمد، مہر انسا حمزہ، نصرت شہباز شریف، شہبازشریف اور سلیمان شہبازشریف کے اکاو¿نٹس منجمد کیے ہیں. مجموعی طور پر اکاو¿نٹس 16 مختلف بینکوں میں موجود تھے. دریں اثناء قومی احتساب بیورو(نیب ) سابق وزیراعظم نواز شریف کے بھتیجے یوسف عباس کو 23جولائی کو طلب کر لیا۔تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کے بھتیجے یوسف عباس کو چودھری شوگر مل کے حوالے سے طلب کیا گیا ہے اور ان کو تمام ریکارڈ ساتھ لانے کی ہدایت کی گئی ہے۔نیب کے مطابق یوسف عباس شریف کے اکاو¿نٹس میں ٹی ٹی کے ذریعے پیسہ منتقل ہوا۔واضح رہے کہ یوسف عباس نواز شریف کے بھائی عباس شریف کے بیٹے ہیں۔

Scroll To Top