عمران خان جادو گر نہیں مگر انہوں نے جادو کر دکھایا ہے

11جون کی شب کو قوم نے اُس عمران خان کو دیکھا اور سنا جو دو دہائیاں قبل ” اِس ملک کے قیصر و کسریٰ “ کے درودیوار ہلا ڈالنے کے لئے خوابوں کا ایک پرچم لے کر نکلا تھا۔۔۔ 

میں اُس عمران خان کا ہم سفر کب بنا یہ ایک الگ کہانی ہے جو میں آئندہ کبھی بیان کروں گا۔۔۔ مگر آج قیصر بھی زنداں کی دیواروں کے پیچھے ہے اور کسریٰ بھی قید میں پہنچ چکا ہے۔۔۔ اگر میں یہ کہوں تو غلط نہیں ہوگا کہ عوام تین دہائیوں تک ملک کے مافیا خاندانوں کے شکنجے میں بے بسی کی زندگی گزارنے کے بعد وہ زنجیریں توڑنے کی آزادی حاصل کرنے والے ہیں جن کے ہوتے ہوئے سلطانی ءجمہور کا تصور ایک خیال خام کے سوا کچھ بھی نہیں۔۔۔
کل تک ہم ہمسفر تھے۔۔۔
آج وہ ملک کے وزیراعظم ہیں اور میں ایک عام شہری۔۔۔ مگر ہمارے درمیان سوچ کا رشتہ قائم ہے۔۔۔ میں نے گزشتہ شب انہیں مبارکباد دی تو انہوں نے تہہ دل سے جواب دیا ” تھینک یو۔۔۔“
مگر یہ ” تھینک یو“ میں آپ کو کہنا چاہتا ہوں جناب وزیراعظم۔۔۔
آپ جادوگر نہیں ہیں ۔۔۔
مگر آپ نے جادو کر دکھایا ہے۔۔۔
آپ بھی غلطیاں کرنے والے انسان ہی ہیں مگر آپ کی غلطیوں نے آپ کے سفر کی سمت تبدیل نہیں کی۔۔۔
اس سفر میں کروڑوں عوام کی دعائیں آپ کے ساتھ ہیں۔۔۔

Scroll To Top