ٹوئیٹر کالم برائے غلام اکبر 29-05-2019


28 مئی۔ہماری تاریخ کا یوم تکبیر۔اللہ اکبر کی صدائیں پوری دنیا کو سنانے والا دن۔اہل پاکستان کو اپنے ازلی دشمن کے حملے کے امکان سے آزادی دلانے والا دن۔وہ دن جسے روکنے کے لئے حکومتِ وقت نے دو ہفتوں تک ہر جتن کیا مگر یہ دن وطنِ عزیز کی آزادی کی علامت بن کر آگیا۔ اے کیو خان تھینک یو!
28مئی 2019ء
۔۔۔۔۔۔۔۔
سوشل میڈیا پر پاکستان کی جنگ لڑنے والا ہر سپاہی میری نظر میں ایک جری جرنیل ہے۔میں ان سب کو سلام کرتا ہوں بلکہ سلامی دیتا ہوں
27مئی 2019ء
۔۔۔۔۔۔۔۔
مریم نواز صاحبہ گھوڑے زیادہ تر میدان جنگ میں اور گدھے زیادہ ترپارلیمنٹ میں جایا کرتے ہیں۔میں ان ارکان پارلیمنٹ سے معذرت خواہ ہوں جو گدھے نہیں۔ویسے گدھا اگر باربرداری کا کام کرتا رہے تو اپنی مثال آپ ہے۔لیکن اگر حکمران یا قانون ساز بن جائے تو شامت اعمال کہلائے گا۔؟
27مئی 2019ء
۔۔۔۔۔۔۔۔
پاکستان میں کم از کم ایک ہزار گولیاں ضرور ایسی بننی چاہئیں جن میں سے ہر ایک پر ایک غدار کا نام لکھا ہو۔مجھے یقین ہے کہ زیادہ سے زیادہ پانچ گولیوں کے استعمال کی نوبت آئے گی-اس کے بعد کوئی دراوڑ کوئی بھیل اورکوئی پشتین ہمارے کھیتوں میں نہیں اگے گا۔ داوڑ یا داو ر یا کچھ اور؟
27مئی 2019ء
۔۔۔۔۔۔۔۔
میں پیشگوئی کرتا ہوں کہ مودی کبھی عمران خان کے ساتھ مذاکرات نہیں کرے گا۔مذاکرات کے لئے مودی کو پاکستان میں نواز شریف جیسا وزیر اعظم چاہیے۔یہ خیال خام ہے کہ گاﺅرکشا کی آڑ میں مسلمانوں پر بھارت میں عرصہءحیات تنگ کر دینے والا انسان نما عفریت ہمارے جزبہء امن پر پھول نچھاور کرے گا۔
27مئی 2019ء

Scroll To Top