نیب نے شریف فیملی کیخلاف 3 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کے شواہد حاصل کر لیے

  • 2لاکھ 50ہزار ڈالر کی منتقلی کے دستاویزی ثبوت ، ہانگ گانگ میں قائم گرین لینڈ، دبئی میں براسل، ایم پی ٹریڈنگ ،الودی کمپنی ،سوفٹ میسجز، آر فارمز، اور بینکوں کے ریکارڈ تک دسترس حاصل کرلی
  • سلمان شہباز کی وقار ٹریڈنگ کے نام سے بنائی گئی کمپنی جو کہ شریف فیملی کے ذاتی ملازم سید طاہر نقوی کے نام پر رجسٹرڈ ہے، کے ذریعے بھاری رقوم بزریعہ کراس چیک منتقلی کا انکشاف، مشتاق چینی کے بیٹے یاسر مشتاق کے نام پر غیر ملکی کرنسی منتقلی بھی آشکار

لاہور ( این این آئی) قومی احتساب بیورو (نیب ) نے شریف فیملی کے متعلق ابتک 3 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کرنے کے شواہد حاصل کرنے کا دعویٰ کیا ہے ۔ نجی ٹی وی کے مطابق نیب نے رمضان شوگر مل کے منیجر اور شریف فیملی کے فرنٹ مین محمد مشتاق عرف چینی کی تفتیشی رپورٹ احتساب عدالت میں جمع کرادی ہے ۔تفتیشی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ نیب نے اب تک 2لاکھ 50ہزار ڈالر کی منتقلی کے دستاویزی ثبوت اور ہانگ گانگ میں قائم گرین لینڈ، دوبئی میں براسل، ایم پی ٹریڈنگ اور الودی کمپنی کا ریکارڈ حاصل کرلیا ہے، جبکہ سوفٹ میسجز، آر فارمز، اور بینکوں کا ریکارڈ بھی حاصل کیا ہے۔رپورٹ کے مطابق شریف فیملی کو ٹیلی گراف کے ذریعے ایک لاکھ سے 2لاکھ 50ہزار امریکن ڈالر منتقل ہوئے، شہبازشریف کے صاحبزادے سلمان شہباز نے وقار ٹریڈنگ کے نام سے کمپنی بنا رکھی ہے جو شریف فیملی کے ذاتی ملازم سید طاہر نقوی کے نام پر رجسٹرڈ ہے، ملازم کی کمپنی وقار ٹریڈنگ میں بھاری رقوم بزریعہ کراس چیک جمع ہوتے رہے۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مشتاق چینی کے بیٹے یاسر مشتاق کے نام پر بھی غیر ملکی کرنسی منتقل ہوتی رہی ہے جب کہ نیب نے اب تک شریف فیملی کے متعلق 3ارب روپے کی منی لانڈرنگ کرنے کے شواہد حاصل کیے ہیں۔

Scroll To Top