ہم کہتے تھے نا کہ یہ پارٹی نو آموز کھلنڈروں کا ٹولہ ہے ؟

چونکا دینے والے بیانات دینے کے شوقین وزراءپر وزیراعظم عمران خان کو خاص نظر رکھنی ہو گی۔کچھ وزراءایسے بھی ہیں جنہیں اندر سے ابھی تک یقین نہیں آیا کہ وہ حکومت پاکستان کی کابینہ کے ارکان بن چکے ہیں۔اپنے اسی عدم یقین کو وہ گو نجداربیانات اور©” سکندرانہ”شان والے رویوں سے دبانے کی کوششوں میں لگے رہتے ہیں۔
میرا اشارہ صرف فیصل واڈا کی طرف نہیں جو اس قبیل کے سردارہیں۔انہیں کھلبلی مچانے والے بیانات دینے اور قوم کی توجہ اپنی طرف کھینچنے والے رویے اختیار کرنے کا شوق ہے۔ مگر یہ شوق پی ٹی آئی کے امیج کو بڑا مہنگا پڑ رہا ہے۔زیادہ دن نہیں ہوئے انہوں نے یہ بیان دے کر ملک بھر کو چونکا دیا تھا کہ دو چاردن میں ایسا کچھ ہونے والا ہے کہ ہر طرف نوکریوں کی بھرمار ہو گی۔
لاکھوںملازمتیں دستیاب ہوں گی لیکن ان کے امیدوار کم پڑ جائیں گے۔
وہ دو چار دن تو گذر ہی گئے ۔اس کے بعد کے دوچاربلکہ سات آٹھ دن بھی گذر چکے ہیں۔پورے ملک کی نظریں کسی معجزے کے انتظار میں آسمان پر جمی ہوئی ہیں۔
اور پی ٹی آئی کے بدخواہ کہتے پھر رہے ہیں کہ “ہم کہتے تھے ناکہ یہ پارٹی نو آموز کھلنڈروں کا ٹولہ ہے ؟

Scroll To Top