جعلی اکاو¿نٹس ، میگا کرپشن کیسز : پی پی پی ، ن لیگ نیب پر دباو¿ ڈالنے کیلئے متحرک

  • کرپشن کے خلاف متحرک نیک نام نیب افسران کے تبادلوں اور قومی دولت کی لوٹ مار میں ملوث بڑے مگر مچھوںکے نام ریفرنسز سے نکالنے کےلئے پس پردہ کوششیں جاری، ادارے کے افسران سے بیک ڈور رابطوں کی بھی کوششوں کا انکشاف
  • پیپلز پارٹی اور ن لیگ کی طرف سے مبینہ طور پر گارنٹرز کو مقاصد کے حصول کے لئے استعمال کرنے کی اطلاعات ،دونوں جماعتوں کی طرف سے اپنے اپنے ادوار میں نوکریوں پر لگائے گئے افسران کو احسانات یاددلانے کا بھی انکشاف

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) جعلی اکاو¿نٹس اور میگا کرپشن کیسز میں نیب پر دباو¿ ڈالنے کی منظم کوششوں کا انکشاف ہوا ہے.اے آر وائی کے مطابق نیب کے کرپشن کے خلاف متحرک ارکان کے تبادلے اور بڑے مجرموں کا نام ریفرنسز سے نکالنے کے لیے پس پردہ عناصر متحرک ہو گئے۔نیب کے کچھ افسران کو ہٹانے کے لئے دباو¿بڑھ گیا، کیس میں ریفرنس پرہاتھ ہلکا رکھنے کی سفارشیں بھی آنے لگیں، نیب میں موجود اہم مقدمات سے متعلق رازافشا کئے جانے کا بھی انکشاف ہوا ہے، نیب کے کچھ افسران سیاسی شخصیات سے بھی رابطے میں ہیں.موصولہ اطلاعات کے مطابق جعلی اکاو¿نٹس اورکرپشن ریفرنسز میں نیب کے شکنجے میں پھنسے بڑے مگرمچھوں نے ہاتھ پاو¿ں مارنا شروع کر دیے.ذرائع کے مطابق جعلی اکاو¿نٹس اور کرپشن ریفرنسز میں نیب پر دباو¿ ڈالاجارہا ہے، پیپلز پارٹی اور ن لیگ نے میبنہ طور پر گارنٹرز کو استعمال کرنا شروع کر دیا، ن لیگ اور پی پی نے اپنے ادوار میں نوکریوں پر لگائے گئے افراد کو بھی احسانات یاد کرانے شروع کردیے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ جے آئی ٹی کی الٹ چیزیں تیار کی جا رہی ہیں، بعض چیزیں حذف کی جا رہی ہیں، تاکہ ملزمان کو کچھ ٹرائل اور کچھ اپیلوں میں سہولت مل سکے۔مشیر احتساب شہزاد اکبر نے اپنے ایک بیان میںکہا تھا کہ جن کے خلاف کیسز ہیں، وہ 10 سال سے اقتدارمیں رہے، مشیراحتساب نے مزید کہا 10 سال میں اہم اداروں میں اپنے لوگ بھی لگائے گئے ہوں گے.

Scroll To Top