اپنے دفاع کا حق آئندہ بھی استعمال کریں گے، عمران خان

  • وزیر اعظم سے چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی اور تینوں سروسز چیفس کی ملاقات
  • مسلح افواج کسی بھی جارحیت سے نمٹنے کے لیے تیار ہیں،ملک کی زمینی، فضائی اور بحری صورت حال اور پاک ،بھارت کشیدگی کے تناظر میں کسی بھی ممکنہ صورتحال سے نمٹنے کی تیاریوں بارے سروسز چیفس نے مکمل آگاہی دی
  • پاکستان تمام ہمسائیوں کے ساتھ امن چاہتا ہے تاہم کسی بھی جارحیت کا بھرپور جواب دینے کے لیے تیار ہیں، وزیر اعظم کی موجودہ صورتحال میں بری فوج کے اقدامات، پاک فضائیہ کی کارکردگی اورپاک بحریہ کے کردار کی بھرپور ستائش

اسلام آباد (الاخبارنیوز) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ قوم کو مسلح افواج کی صلاحیتوں پر پورا بھروسہ ہے، ہم اپنے دفاع کا حق آئندہ بھی استعمال کریں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملاقات کیلیے آنے والے مسلح افواج کے سربراہان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، وزیراعظم عمران خان سے تینوں مسلح افواج کے سربراہان نے ملاقات کی، ملاقات وزیراعظم آفس میں ہوئی۔اس موقع پر چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، نیول چیف ظفر محمود عباسی اور ایئر چیف مجاہد انور خان بھی موجود تھے۔ ملاقات میں ملکی سلامتی کی صورتحال پر غور اور پاک فوج کے پیشہ ورانہ امور پر تبادلہ خیال کیا گیا اور خطے کی سیکیورٹی اور23 مارچ کے حوالے سے قومی تقریب کی تیاریوں کا جائزہ بھی لیا گیا۔ مسلح افواج کے سربراہان نے اس عزم کا اظہار کیا کہ مسلح افواج کسی بھی جارحیت سے نمٹنے کے لیے تیار ہیں، سروسز چیفس نے زمینی، فضائی اور بحری صورت حال اور تیاریوں پر وزیر اعظم عمران خان کو بریفنگ دی،آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے امن کیلئے حالیہ اقدامات سے آگاہ کیا، اس کے علاوہ وزیراعظم کو پاک بھارت کشیدگی اور ممکنہ خطرات پر تازہ صورتحال اور کشیدگی پر ممکنہ خطرات سے نمٹنے کیلئے تیاریوں سے بھی آگاہ کیا گیا۔وزیر اعظم عمران خان نے اپنی گفتگو میں حالیہ کشیدگی میں پاک فوج کے بروقت اقدامات کو سراہا، ان کا کہنا تھا کہ قوم کو مسلح افواج کی صلاحیتوں پر پورا بھروسہ ہے۔پاکستان اپنے دفاع کا حق آئندہ بھی استعمال کرے گا، انہوں نے پاک فضائیہ کی کارکردگی کی تعریف کی اور سمندری حدود میں پاک بحریہ کے کردار کو بھی سراہا۔

Scroll To Top