گرتی ساکھ کی بحالی کیلئے:مودی پاکستان کیخلاف سرجیکل اسٹرائیک کر سکتا ہے،ممتابینر جی کادعویٰ

  • پلوامہ حملہ خود مودی نے کروایا ،الیکشن کے قریب آتے ہی نریندرمودی پلوامہ جیسا ایک اور حملہ کروا سکتے ہیں،راج ٹھاکرے
  • پاکستان اور بھارت کے درمیان جو بھی کشیدگی ہے اس کی وجہ نریندر مودی ہے، خدشہ تھا کہ مودی الیکشن سے پہلے کوئی غلط کام کر سکتے ہیں،اروند کیجریوال

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بینر جی نے دعویٰ کیا ہے کہ اپنی تیزی سے گرتی ہوئی ساکھ کی بحالی اور آئندہ انتخابات میں کامیابی کے لئے مودی سرکار آئندہ ماہ اپریل میں پاکستان کے خلاف ایک اور سرجیکل اسٹرائیک کا دعویٰ کر سکتی ہے، تاہم موصوفہ کے ان خیالات کے بہت سے دیگر سیاسی رہنماﺅں اور سیاسی تجزیہ نگاروں نے اتفاق نہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کسی بھی دوسرے ملک کے خلاف اس قسم کا اقدامات بغیر کسی ثبوت کے کرنا نہ صرف مشکل ہے بلکہ ناممکن ہوگا۔ دریں اثناء بھارت کی بڑی سیاسی جماعت ’عام آدمی پارٹی‘ کے راہنما اروند کیجریوال نے پاکستان اور بھارت کے درمیان چل رہے تناﺅ کی وجہ مودی کو قرار دے(باقی صفحہ7 بقیہ نمبر6
دیا۔ نئی دہلی کے سابق وزیراعلی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان جو بھی کشیدگی ہے اس کی وجہ نریندر مودی ہے، انکا کہنا تھا کہ ہمیں پہلے ہی خدشہ تھا کہ مودی الیکشن سے پہلے کوئی ایسا کام کر سکتے ہیں۔سابق بھارتی بیوروکریٹ اور عام آدمی پارٹی کے رہنمااروند کیجریوال جو کہ نئی دہلی کے وزیر اعلی بھی رہے ہیں نے بتایا کہ تناﺅکے یہ تمام حالات مودی سرکار نے خود بنائے ہیں۔ یاد رہے بھارت کی جانب سے پاکستان کو بدنام کرنے کی کوششیں جاری رہیں۔ پاک بھارت کشیدگی کئی دن تک چلی جس کی وجہ سے دونوں ممالک کی فضائی حدود بھی بند رہی۔ اب ایک بڑی بھارتی سیاسی جماعت کے راہنما نے کہا ہے کہ یہ تمام سازش مودی کی تھی۔ کیجریوال کا کہنا تھا کہ انہیں اور انکی جماعت کو پہلے ہی خدشہ تھا کہ مودی الیکشن کے قریب جا کر ایسی کوئی حرکت کر سکتے ہیں۔ اِس سے پہلے گزشتہ روز ایک اور بھارتی تنظیم کے سربراہ راج ٹھاکرے نے بھی کہا تھا کہ پلوامہ میں حملہ خود مودی نے کروایا ہے اور انہوں نے یہ پیشنگوئی کی بھی کی کہ اگلے دو ماہ میں الیکشن کے قریب آتے آتے نریندرمودی پلوامہ جیسا ایک اور حملہ کروا سکتے ہیں۔

Scroll To Top