بھارتی حکام نے پی ایس ایل فائنل دیکھنے کیلیے پاکستان آنے کی دعوت مسترد کردی

آئی سی سی چیرمین سمیت دیگر غیرملکی شخصیات پی سی بی کی دعوت پر پاکستان آرہے ہیں۔

بھارت سے تعلق رکھنے والے آئی سی سی کے صدر ششانک منوہر پی ایس ایل فور کے میچز دیکھنے پاکستان نہیں آئیں گے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیرمین احسان مانی کے مطابق بھارت سے تعلق رکھنے والے انٹر نیشنل کرکٹ بورڈ کے صدر نے  نجی مصروفیت کی وجہ سے پاکستان آنے سے معزرت کا اظہار کیا ہے تاہم آئی سی سی چیئرمین ڈیوڈ رچرڈسن سمیت دیگر غیرملکی شخصیات پی سی بی کی دعوت پر پاکستان آرہے ہیں۔

نیشنل اسٹیڈیم کے دورہ کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بورڈ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ آسٹریلیا اور بنگلادیش کرکٹ بورڈز کے سیکیورٹی ماہرین پاکستان آکر صورتحال کا جائزہ لیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں احسان مانی نے کہا کہ پی ایس ایل فور کے کامیاب انعقاد سے دنیا میں پاکستان کا تصور تبدیل ہوگا۔

قبل ازیں انہوں نے اسٹیڈیم کے مختلف حصوں کا دورہ کیا اور جاری کام کا جائزہ لیا،این ایل سی کے کرنل صہیب اور نیشنل اسٹیڈیم کے جنرل منیجر ارشد خان نے ان کو تفصیلی بریفننگ دی، بورڈ کے سربراہ نے میڈیا سینٹر کا بھی دورہ کیا اور مقابلوں کے دوران اسپورٹس صحافیوں کو مکمل سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

اس سے قبل پی سی بی نے پی ایس ایل فائنل دیکھنے کیلیے بھارت سمیت تمام آئی سی سی بورڈ ڈائریکٹرز کو مدعو کر کیا تھا،  کونسل کے بھارتی چیئرمین ششانک منوہر کو بھی دعوت دی گئی تھی۔ ذرائع کے مطابق جس وقت دعوت ارسال کی گئی تب جنگ کا ماحول نہیں بنا تھا، موجودہ صورتحال میں بورڈ خود انہیں مدعو کرنے سے گریز کرتا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے افغانستان، آسٹریلیا، انگلینڈ، بنگلہ دیش،آئرلینڈ، نیوزی لینڈ، جنوبی افریقہ، سری لنکا، ویسٹ انڈیز اور زمبابوے کے کرکٹ سربراہان کو بھی کراچی مدعو کیا ہے، حکام چاہتے ہیں کہ غیرملکی مہمان خود آکر سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیں، اس سے انھیں ٹیمیں بھیجنے کے فیصلے میں بھی مدد ملے گی، گزشتہ دنوں ”کرکٹ پاکستان“ کو انٹریو میں ایم ڈی پی سی بی وسیم خان نے بتایا تھا کہ آسٹریلیا، بنگلہ دیش اور سری لنکا کے سیکیورٹی منیجرز کو بھی فائنل دیکھنے کی دعوت دی جائے گی۔

Scroll To Top