رانا ثناءاللہ اور رانا مبشر اقبال کیخلاف بھی نیب تحقیقات شروع

  • رانا ثنا اللہ پر فیصل آباد میں انڈرپاس کا نقشہ تبدیل کروانے اور من پسند افراد کو کروڑوں روپے کا خلاف قانو ن فائدہ پہنچانے کا بھی الزام ہے
  • رانا مبشر اقبال پر ایک بیوہ خاتون کی اراضی پر غیر قانونی قبضے اور ریکارڈ میں جعلسازی سے ردوبدل کا الزام ہے، دونوں رہنماﺅں کیخلاف انکوائری شروع

rana
لاہور( الاخبار نیوز) مسلم لیگ ن کے رہنما کیخلاف نیب کا شکنجہ سخت ہو گیا، سابق وزیر قانون رانا ثنا اللہ کیخلاف تحقیقات شروع کر دی گئیں۔ نجی ٹی وی کے مطابق رانا ثنا اللہ پر فیصل آباد میں انڈرپاس کا نقشہ تبدیل کرانے کا الزام ہے، ان پر من پسند افراد کو کروڑوں کا فائدہ پہنچانے کا بھی الزام ہے، صوبائی وزیر کیخلاف نیب میں درخواست دائر ہونے پر تحقیقات کا آغاز کیا گیا ہے ، ادھر مسلم لیگ ن کے ایک اور رکن قومی اسمبلی رانا مبشر اقبال کے خلاف بھی قومی احتساب بیورو (نیب) میں زمین پر قبضے کی شکایت درج کروادی گئی ہے، نیب درخواست کا جائزہ لے کر کارروائی کا آغاز کرے گی۔رانا مبشر کے خلاف ایک بیوہ خاتون نے نیب میں شکایت درج کروائی ہے۔ خاتون نے اپنی زمین پر مبینہ قبضے کیخلاف درخواست درج کروائی ہے۔درخواست گزار خاتون کا کہنا ہے کہ خیابان امین ہاو¿سنگ سے مل کر رانا مبشر اور ان کے ساتھیوں نے ان کی زمین پر قبضہ کیا ہے۔ رانا مبشر نے ملی بھگت سے ریکارڈ میں بھی جعلسازی کی ہے۔نیب لاہور نے بیوہ کی درخواست منظور کرتے ہوئے رانا مبشر کے خلاف تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔

Scroll To Top