وزیراعظم عمران خان کی کامیاب ڈپلومیسی:پاکستان،یواے ای کا اقتصادی شراکت داری بڑھانے پر اتفاق

  • تجارت ‘ سرمایہ کاری ‘ اقتصادی ترقی ‘ توانائی‘ انفراسٹرکچر ، زراعت ، دفاع، دفاعی پیداوار،تربیت اور مشترکہ مشقوں میں تعاون بڑھانے پر اتفاق رائے ، دہشت گردی، منشیات سمگلنگ ‘ منی لانڈرنگ اور انسانی سمگلنگ سمیت دیگر منظم جرائم سے نمٹنے کےلئے بھی تعاون کو مزید فروغ دینے پر اتفاق
  • وزیر اعظم کی ولی عہد شیخ محمد بن زید النہیان اور ہم منصب شیخ محمد بن راشدالمکتوم سے وفود کی سطح پر ملاقات ، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر خزانہ اسد عمر، وزیر پیٹرولیم غلام سرور خان، وزیر توانائی عمر ایوب خان ‘ مشیر برائے تجارت عبدالرزاق داﺅد اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ بھی وفد میں شامل

ابوظہبی (آن لائن) وزیراعظم عمران خان اور ولی عہد شیخ محمد بن زید النہیان نے پاک یو اے ای تعلقات کو طویل المدت سٹریٹجک اقتصادی شراکت داری میں منتقل کرنے پر اتفاق کرلیا ہے‘ یہ اتفاق رائے وزیراعظم کے دورہ متحدہ عرب امارات میں ان کی ملاقات کے دوران طے پایا‘ ابوظہبی کے ولی عہد اور یو اے ای کی مسلح افواج کے نائب سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زید النہیان وزیراعظم عمران خان نے متحدہ عرب امارات کا سرکاری دورہ کیا ان کے ہمراہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی‘ وزیر خزانہ اسد عمر ‘ وزیر پیٹرولیم غلام سرور خان‘ وزیر توانائی عمر ایوب خان ‘ مشیر برائے تجارت عبدالرزاق داﺅد اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اعلیٰ سطحی وفد میں ہمراہ تھے۔ وزیراعظم عمران خان اتوا ر کو متحدہ عرب امارات کے ایک روزہ دورے پر پہنچے ، ابوظہبی ایئر پورٹ پر وزیراعظم کا استقبال وزیر مملکت سلطان بن جابر نے کیا جس کے بعد وزیراعظم صدارتی محل پہنچے جہاں ان کا استقبال ولی عہد شیخ محمد بن زید النہیان نے کیا، اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کو گارڈ آف آنر بھی پیش کیا گیا۔وزیراعظم نے شیخ زید مسجد اور یادگار شہداءکا بھی دورہ کیا جہاں انہوں نے اپنے ملک کیلئے خدمات سرانجام دیتے ہوئے جانیں قربان کرنے والے اماراتی ہیروز کو خراج عقیدت پیش کیا۔ ولی عہد کے ساتھ وفود کی سطح پر مذاکرات میں دو طرفہ علاقائی اور عالمی دلچسپی کے تمام شعبوں پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ دونوں رہنماﺅں نے موجودہ تعلقات کے مثبت سمیت میں گامزن ہونے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے تاریخی شراکت داری میں مزید جدت لانے کیلئے فوری اقدامات اٹھانے پر اتفاق کیا۔ دونوں رہنماﺅں نے تجارتی و اقتصادی تعلقات کو مضبوط اور دونوں ملکوں کے درمیان تجارت و سرمایہ کاری میں اضافے کا عزم بھی ظاہر کیا اور یو اے ای کے ایک اعلیٰ سظحی وفود کے دورہ پاکستان کے مفید نتائج پر بھی اطمینان کا اظہار کیا۔ اور موجودہ خصوصی تعلقات کو دیرپا سٹریٹجک اقتصادی شراکت داری میں منتقل کرنے کے عزم کو دہرایا۔ جس کیلئے برائہ راست شفاف اور متعین شدہ سوچ اختیار کی جائے گی۔ فریقین نے تجارت ‘ سرمایہ کاری ‘ اقتصادی ترقی ‘ توانائی‘ انفراسٹرکچر اور زراعت کے شعبوں میں تعاون اور شراکت کو بڑھانے کیلئے ایک جامع روڈ میپ تیار کرنے پر اتفاق کیا۔ وزیراعظم عمران خان اور ولی عہد شیخ محمد بن زید النہیان نے فروری 2019ءمیں ابوظہبی میں پاک یو اے ای دو طرفہ وزارتی کمیشن کے انعقاد کا فیصلہ کیا جس کی مشترکہ صدارت دونوں ملکوں کے وزرائے خارجہ کریں گے انہوں نے وزرائے خارجہ و سینئر حکام کی سطح پر دو طرفہ سیاسی مشاورتی عمل کو جاری رکھنے کے عزم کو دوہرایا اور فوری بنیادوں پر زیر التوا معاہدوں کو حتمی شکل دینے پر اتفاق کیا۔ جبکہ موجودہ دفاعی و سیکیورٹی تعاون پر بھی اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے تربیت ‘ مشترکہ مشقوں اور دفاعی پیداوار کے شعبوں میں تعاون کو مزید فروغ دینے کا عزم ظاہر کیا گیا۔ دونوں رہنماﺅں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ شراکت کے اہم عوامل میں علاقائی اور عالمی اہمیت پر نقطہ نظر کی مکمل شناخت کرنا ہے اور اس بات پر زور دیا کہ برداشت ‘ جامع پسندی ‘ عدم مداخلت اور عوام پر مرکوز ترقیاتی ایجنڈا کے اصولوں پر کاربند رہ کر بھی خطے میں دیرپا امن و استحکام کا حصول ممکن ہے اس موقع پر ہر قسم کی دہشت گردی اور اس کے پروان چڑھنے کی مذمت کی گئی اور اس لعنت سے چھٹکارا پانے کیلئے مل کر کام کرنے پر عزم ظاہر کیا گیا ولی عہد نے پاکستان کی جانب سے دہشت گردی و انتہا پسندی کے خاتمے کیلئے کوششوں دی جانے والی قربانیوں کو سراہا۔ اور پاکستان کی کامیابیوں کا اعتراف کیا۔ جبکہ منشیات سمگلنگ ‘ منی لانڈرنگ اور انسانی سمگلنگ سمیت دیگر منظم جرائم سے نمٹنے پر تعاون کو مزید فروغ دینے پر بھی اتفاق کیا گیا۔ وزیراعظم عمران خان نے یو اے ای کی بانی اور پہلے صدر شیخ محمد بن زید النہیان کی قیادت اور پاک یو اے ای دوستی کے قیام میں ان کے کردار کو خراج عقیدت پیش کیا۔ اور کہا کہ وہ پاکستان کے ایک مخلص دوست تھے جن کے دل میں پاکستان اور اس کی عوام کیلئے بے پناہ محبت تھی اور پاکستانی عوام اس محبت کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ انہوں نے برداشت و جامع اقتصادی ترقی‘ جدت پسندی اور نوجوانوں اور خواتین کو بااختیار بنانے‘ سیاحت کے فروغ اور گورننس کی بہتری کیلئے ٹیکنالوجی کے میدان میں کامیابی کیلئے یو اے ای کی جانب سے کی جانے والی پیش رفت کو بھی سراہا اور پاکستان کی سماجی و اقتصادی ترقی کیلئے یو اے ای اور اس کی قیادت کے عزم کے تسلسل پر اظہار تشکر کیا اور خاص طور پر پاکستان میں پولیو کے خاتمے کیلئے شیخ محمد بن زید النہیان کی مدد پر شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے اپنی حکومت کے عوام دوست ایجنڈا بشمول کرپشن کے خاتمے ‘ شفافیت کے فروغ اور حکومت کے ہر سطح پر احتساب کے عمل سے متعلق یو اے ای کی قیادت کو آگاہ کیا۔ پاکستان نے ایکسپو 2020 ءمیں موثر اندازمیں شرکت کیلئے تیاری کے عزم کو دوہرایا اور میگا ایونٹ کی کامیابی میں یو اے ای کے ساتھ بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی اور پاکستان نے ایکسپو 2020 ءکیلئے تیاری کے سلسلے میں آئی ٹی کے شعبے میں ماہر افرادی قوت کی خدمات کی بھی پیشکش کی ہے اس موقع پر دونوں ملکوں نے افرادی قوت کے حوالے سے معاملات پر تعاون کو فروغ دینے پر بھی اتفاق کیا۔ دریں اثناء وزیراعظم عمران خان نے متحدہ عرب امارات کے ہم منصب شیخ محمد بن راشدالمکتوم سے بھی ملاقا ت کی جس میں دونوں رہنماﺅں نے دوطرفہ تعلقات اور باہمی دلچسپی کے اہم علاقائی و عالمی تعلقات پر تبادلہ خیال کیا ۔ وزیراعظم عمران خان کا یہ چند ماہ میں دوسرا دورہ یو اے ای ہے جو کہ دونوں ملکوں کے خصوصی تعلقات جو باہمی لگاﺅ اور گہرے اعتماد کے جذبے کی بنیاد پر قائم ہیں کی مضبوطی کی عکاسی کرتا ہے جس کے تحت دونوں ملک پرانی تہذیب ‘ مذہب ‘ ثقافت اور کمرشل تعلقات سے جڑے ہیں۔ وزیراعظم نے انہیں اور ان کے وفد کے پرتپاک استقبال اور مہمان نوازی پر سنجیدگی سے تعریف کی اور شیخ محمد بن زید النہیان کو دورہ پاکستان کی دعوت دی جو انہوں نے قبول کرلی دورے کیلئے تاریخوں کا تعین بعد میں کیا جائے گا

Scroll To Top