نیب نے حمزہ اور سلمان شہباز کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کردی

  • ن لیگی رہنما حمزہ شہباز اور سلمان شہباز کے خلاف سرکاری وسائل سے غیر قانونی پل کی تعمیر اور 56 کمپنیوں سے تعلق کی تحقیقات جاری ہیں جن کی بناءپر ان کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کیلئے وزارت داخلہ کو خط لکھ دیا
  • سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے دونوں صاحبزادوں نے گرفتاری سے بچنے کے لیے حفاظتی ضمانت کرارکھی ہے، یاد رہے کہ قومی احتساب بیوروکا موقف ہے کہ سلمان شہباز طلبی کے باوجود حاضر نہیں ہورہے اور تحقیقات میں تاخیر ہورہی ہے

اسلام آباد: ( الاخبار نیوز) شریف خاندان کی مشکلات میں اضافہ ہو گیا، نیب نے شہباز شریف کے دونوں بیٹوں سلمان اور حمزہ شہباز کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کے لئے وزارت داخلہ کو خط لکھ دیا۔آمدن سے زائد اثاثے بنانے اور رمضان شوگر ملز کیس کا معاملہ، نیب شریف خاندان کے خلاف مزید سرگرم ہو گیا، نیب کے ایگزیکٹو بورڈ نے کیس کا جائزہ لینے کے بعد سلمان شہباز اور حمزہ کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی منظوری دیتے ہوئے وزارت داخلہ کو خط بھی لکھ دیا ہے۔نیب حکام کے مطابق چنیوٹ میں ضلعی انتظامیہ نے شہباز شریف کی ذاتی شوگر ملز سے آلودہ پانی کی نکاسی کے لیے 25 کلومیٹر طویل پختہ نالہ تعمیر کیا تھا، سرکاری ریکارڈ میں نالے کی تعمیر کا مقصد اطراف کے دیہات کے سیوریج پانی کا نکاس ظاہر کیا گیا تھا۔عملی طور پر یہ نالہ رمضان شوگر ملز کے آلودہ پانی کو سیم نہر میں ڈالنے کے لیے بنایا گیا تھا اور اس پر 60 کروڑ روپے لاگت آئی تھی جبکہ پل کی تعمیر کے لیے غیر قانونی طور پر احکامات سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے جاری کیے۔واضح رہے کہ شہباز شریف پہلے ہی آشیانہ ہاو¿سنگ سکینڈل میں گرفتار ہیں اور اب آمدن سے زائد کیس میں بھی نیب کی جانب سے تحقیقات شروع کر دی گئیں ہیں، اس تناظر میں شہباز شریف کے دونوں بیٹوں سلمان اور حمزہ کے گرد بھی مزید گھیرا تنگ ہو گیا ہے۔

Scroll To Top