چینی صدر شی جنپگ کا کشادگی پالیسز میں وسعت کرنے کا عزم

چینی صدر شی جنپگ نے چین کی پہلی بین الاقوامی درامدی ایکسپو کی افتتاحی تقریب میں حصہ لیا جو چین کے شہر شنگھاہی میں رواں ماہ نومبر5-10کے مابین منعقد ہوئی چین کے صدر شی جنپگ نے اپنے خطاب میں اس عزم کا اظہار کیا کہ چین مستقبل میں بھی کشادگی اور چینی مارکیٹ کی وسعت کے حوالے سے پالیسز کے تسلسل کو یقینی بنائے گا اور درج زیل شعبوں میں چین کی حکومت ترجیع بنیادوں پر عوامل کو یقینی بنائے گی۔ (1لوگوں کی آمدن اور اخراجات میں خاطر خواہ اضافہ: چین ملک میں تجارتی فروغ کے حوالے سے چینی مارکیٹ میں موجودہ رجحان برائے کھپت میں اضافے کے تسلسل کو یقینی بنائے گا، اس ضمن میں لوگوں کی آمدن میں اضافے کے حوالے سے عملی اقدامات یقینی بنائیں جائیں گے اس حوالے سے درمیانے اور اعلی معیار کی مارکیٹ کھپت کے عوامل کو یقینی بنایا جائے گا۔ (2ٹیرف کی سطع کو کم رکھا جائے گا۔ چین حکومتی سطع پر ٹیرف کنٹرول کو یقینی بنائےگا، کسٹمز کلیئرنس کے حوالے سے امور کو سہل کیا جائے گا، اداروں کی سطع پر لاگت سے متعلق امور کو کنٹرول کیا جائے گا جن میں درامدات سے متعلق لاگت، اور بین السرحد کامرس کو فروغ دیا جائیگا، اور مختلف اقسام کے نئے بزنسز تشکیل دئیے جائیں گے۔(3 شنگھاہی درامدی ایکسپو کامیابی کے تسلسل کو یقینی بنائے گی۔ شنگھاہی درامدی ایکسپو کی طرز پر آئیندہ سالانہ بنیادوں پر ایسے بڑے پروگرامز تشکیل دئیے جائیں گے، اور درامدی ایکسپو کے انعقاد کے حوالے سے مارکیٹ کی نمایاں خصوصیات، کارکردگی، نتائج اور متعلقہ شعبوں کی کامیابیوں کو اجاگر کیا جائے، (4 غیر ملکی سرمایہ کے تمام شعبوں سے متعلق ممکنہ رکاوٹوں کو سہل کیا جائے۔ چین ملک میں مالیاتی کشادگی کو یقینی بنانے کے لیے مختلف عوامل کو یقینی بنایا جا رہا ہے، اس ضمن میں سروس سیکٹر کے ڈھانچے کو مضبوط کیا جا رہا ہے، اس کے علاوہ زراعت، معدنیات، مینو فیکچرنگ، کان کنی میں کشادگی ووسعت کو یقینی بنایا جا رہا ہے دریں اثناءصنعتی شعبوں بشمول مواصلات، تعلیم، صحت، میڈیکل ٹریٹمینٹ اور ثقافتی شعبوں میں کشادگی کے ثمرات بڑھائے جا رہے ہیں۔ بالخصوص تعلیم اور صحت کے شعبوں میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے فروغ کے حوالے سے سہولیات کو بڑھایا جا رہا ہے تاکہ میڈیکل ٹریٹمینٹ کی صنعت کو چین میں بڑھایا جا سکے۔ چین کی وزارتِ کامرس کی جانب سے جاری حالیہ اعدادوشمار کے مطابق آئیندہ پندرہ برسوں کی چین کی درامدی مصنوعات اور سروسز شعبے کا مجموعی حجم بالترتیب30ٹریلین ڈالر اور10ٹریلین ڈالر سے بڑھ جائیگا۔ (5غیر ملکی سرمایہ کاری کے تحفظ کیلئے قوانین اور قواعدوضوابط کو بہتر بنانا۔ چین نے غیر ملکی سرمایہ کاری کے فروغ اور تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے قوانین اور قواعدو ضوابط کو بہتر کرنے کا پروگرام شروع کیا ہے اس طرح سے غیر ملکی اداروں کارپوریشنز اور غیر ملکی سرمایہ کاری کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے قوانین کو شفاف انداز میں مرتب کیا جا رہا ہے، تاکہ انتظامی امور کو بہتر کیا جا سکے اور ممکنہ منفی عوامل کا خاتمہ کیا جا سکے اور غیر ملکی سرمایہ کاری کے فروغ کے لیے ایک بہتر اور شفاف نظام تشکیل ہو، 6)۔انٹی لیکچوئل پراپرٹی رائٹس کا تحفظ، چین غیر ملکی کمپنیز کے قانونی تحفظات کو ہر صورت یقنی بنائے گا تاہم کسی بھی قسم کی غیر قانونی اوامر کو قابلِ سزا متعین بھی کیا گیا ہے، چین نے انٹی لیکچوئل پراپرٹی رائٹس کے تحفظ کے حوالے ایک موثر اور فعال اسٹریٹیجی مرتب کی ہے اور ممکنہ خلاف ورزیوں کے عناصر کے خلاف ایک تادیبی عمل بھی یقینی بنایا گیا ہے۔(7آزادانہ تجارتی بندرگاہ ہینان کا فروغ۔ چین ہینان صوبے میں آزادانہ تجارت کے فروغ کے حوالے سے بندرگاہ کی تعمیرکو تیزی سے یقینی بنانے کے لیے کام کی رفتار کو تیزی سے یقینی بنائے ہوئے ہے۔ آزادانہ تجارت کے فروغ کے حوالے سے ہینان صوبے فری ٹریڈ زون کا درجہ دیا گیا ہے تاکہ غیر ملکی سرمایہ کاری کیساتھ ساتھ اس بندرگاہ سے عالمی تجارت کو ایک نئی جہت حاصل ہو سکے۔ اس طرح سے چینی ڈیویلپمنٹ عمل کو اس آزادانہ بندرگاہ کی مدد سے چینی خصوصیات کیساتھ اجاگر کیا جا رہا ہے۔ (*8 کثیر الجہتی آزادانہ تجارتی نظام کے فروغ کیلئے گفت وشنید کا آغاز۔ چین علاقائی سطع اقتصادی شراکت داری کے حوالے سے جامع منصوبہ بندی اور معاہدات کو یقینی بنا رہا ہے۔ اسی طرح چین یورپی یونین کیساتھ سرمایہ کاری معاہدات کے حوالے سے گفت وشنید کو تیزی سے تکمیل کی جانب لیکر گامزن ہے، اسی طرح چین۔جاپان اورریپبلک آف کوریا کیساتھآزادانہ تجارت کے حوالے سے تمام امور کامیابی کی جانب تیزی سے گامزن ہیں۔ 9) فورم برائے چین افریقہ تعاون کے حوالے سے عوامل پر عمل درامد۔ چین افریقہ تعاون فورم کا انعقاد رواں سال 2018میں چین کے شہر بیجنگ میں ہوا، جس میں طرفین کے مابین باہمی تعاون کے فروغ کے حوالے سے آٹھ معاہدات تشکیل دیئے گئے ان بنیادی پروگرامز پر عمل درامد کو یقینی بنانے کے لیے چین تمام کوششوں کو یقینی بنائے گا اور ان آٹھ پروگرامز کے دو طرفہ نتائج کو یقینی بنائے گا۔ 10) شنگھاہی اور اسکے متعلقہ علاقوں میں چین کے کشادگی پر مبنی عوامل کو یقینی بنانے کے حوالے سے ترجیعانہ امور پر عمل درامد۔ چین کے آزادانہ تجارت کے حوالے سے قائم فری ٹریڈ زون (شنگھاہی) میں نئے سیکشن کے حوالے سے تمام عوامل اور ایریا میں اضافے کو یقینی بنایا جائے گا۔ اسی طرح خصوصی طور پر شنگھاہی میں سائینس اور ٹیکنالوجی کے شعبوں کو بڑھانے کے حوالے سے شنگھاہی اسٹاک ایکسچینج میں سائنیس اور ٹیکنالوجی بورڈ کا قیام اور رجسٹرڈ کمپنیز کے لیے سائینس اور ٹیکنالوجی کے عوامل کو یقینی بنایا جائے گا۔ اسی طرح چین کے یانگٹیز دریا کے علاقے میں اور خصوصی طور پر ڈیلٹائی علاقوں میں ڈیویلپمنٹ کو یقینی بنانے کے لیے امدادی پروگرامز کی تشکیل کو یقینی بنایا جائے گا۔۔

Scroll To Top