کوئی کام ناممکن نہیں، قوم کو عظیم بنائیں گے: وزیراعظم

  • ہر پاکستانی کو شاہین بننا ہوگا،اللہ نے پاکستان اور پاکستانیوں کو بے شمار وسائل عطا کئے ہیں
  • علامہ اقبال نے برسوں پہلے ا±ن مسائل کی پیش گوئی کی جن کا ہمیں آج بھی سامنا ہے،فرقہ واریت اور نظریاتی انتہا پسندی جیسے معاملات پر اقبال ؒ کی سوچ آج بھی ہمارے لیے مشعل راہ ہے
  • شاہین کے تصور اور خودی کے فلسفے کو سمجھ کر اور اس پر عمل پیرا ہونے سے ہی ہم پاکستان کو اقوام عالم میں اس کا اصل مقام دلا سکتے ہیں،عمران خان کا یوم اقبال پر پیغام

عمران خان کی بطور وزیراعظم آفیشل تصویر جاریاسلام آباد(الاخبار نیوز) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کوئی کام ناممکن نہیں، یہ قوم عظیم بن سکتی ہے.ان خیالات کا اظہار انھوں نے یوم اقبال پر اپنے خصوصی ویڈیو پیغام میں کیا. ان کا کہنا تھا کہ اقبال کا شاہین خوف اور ذہنی دباو¿ سے آزاد تھا.وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اقبال کے شاہین وہ تھے، جو بڑی سوچ کے حامل اور انسانیت کے علم بردار تھے، علامہ اقبال کی سوچ کا محور وہ افراد تھے، جو عقل کی غلامی سے آزاد ہوگئے، انھوں نے اپنی ذات کا سوچنے کے بجائے خوف کی زنجیریں توڑدی تھیں.وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ انسان میں عشق اور جنون ہو ،تو ناممکن کو ممکن بنا سکتا ہے، عقل کی غلامی سے آزاد شخص ایک کے بعد ایک منزل طے کرتا جاتا ہے.انھوں نے کہا کہ اللہ نے انسان کو بے پناہ طاقت دی ہے، انسان اپنی طاقت کو جتنا آزماتا ہے، اتنا اوپر جاتا ہے، نبی کریم نے جو کام کئے، وہ انسانی تاریخ میں کبھی کسی نے نہیں کیے.ان کاکہنا تھا کہ پاکستانیوں سے کہتا ہوں، ہمارے لیے کوئی چیزنا ممکن نہیں، اللہ نے پاکستان اور پاکستانیوں کو بے شمار وسائل مہیا کئے ہیں، قائداعظم اورعلامہ اقبال جیسے لوگ عظیم تھے.عمران خان نے کہا کہ علامہ اقبال نے پاکستان کا جو خواب دیکھا تھا، اسے پورا کر دکھایا، ہم پاکستان کو ویسا ملک بنائیں گے، جیساعلامہ اقبال نےسوچا تھا.، بس یہ چیز ذہن نشین ہونی چاہیے کہ کوئی چیز ناممکن نہیں، یہ قوم عظیم بن سکتی ہے اورایک دن ہم ضروربنیں گے.اپنے ویڈیو پیغام میں انھوں نے ماو¿نٹ ایوریسٹ سر کرنے والے ایڈمن ہیلری کے عزم اور جذبے کا بھی ذکر کیا. اس سے قبل اس دن کی مناسبت سے صدر ڈاکٹر عارف علوی اور وزیراعظم عمران خان سمیت دیگر سیاسی رہنماو¿ں نے اپنے الگ الگ پیغامات میں علامہ محمد اقبال کے افکار پر عملدرآمد کے عزم کا اظہار کیا تاکہ اقوام عالم میں بلند مقام حاصل کیا جاسکے۔صدر عارف علوی نے اپنے پیغام میں عظیم فلسفی اور شاعرمشرق کی تعلیمات اور فلسفے پر عملدرآمد کی اہمیت واضح کی تاکہ ملک کو درپیش کثیر الجہتی چیلنجوں سے نمٹا جاسکے۔ وزیراعظم عمران خان نے اپنے پیغام میں کہا کہ علامہ اقبال نے برسوں پہلے ا±ن مسائل کی پیش گوئی کی جن کا ہمیں آج بھی سامنا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ فرقہ واریت اور نظریاتی انتہا پسندی جیسے معاملات پر اقبال ؒ کی سوچ آج بھی ہمارے لیے مشعل راہ ہے۔وزیراعظم عمران خان نے یوم اقبال کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا کہ علامہ اقبال کا کلام د±نیا کے ہر حصے میں پڑھا اور سمجھا جاتا ہے۔ انہوں نے ہمیشہ مسلمانوں کو آپس میں اتحاد اور اتفاق کی تلقین کی اور دعوت عمل دی۔وزیراعظم کے مطابق شاہین کے تصور اور خودی کے فلسفے کو سمجھ کر اور اس پر عمل پیرا ہونے سے ہی ہم پاکستان کو اقوام عالم میں اس کا اصل مقام دلا سکتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ علامہ اقبالؒ نے مسلمانانِ برصغیر کو ایک ایسے وقت میں راستہ دکھایا جب وہ غلامی کے اندھیروں میں منزل کا سراغ کھوچکے تھے۔ ان کے افکار اور سوچ نے ا±مید کا وہ چراغ روشن کیا جس نے نہ صرف منزل بلکہ راستے کی بھی نشاندہی کی۔ پاکستان علامہ اقبال ؒ کے خواب کی تعبیر ہے۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ موجودہ حالات کا تقاضا ہے کہ ہم اقبال کے تصورات کے مطابق پاکستان کو ایک ترقی یافتہ اسلامی فلاحی ریاست کے طورپر اقوام عالم میں روشناس کرائیں۔انہوں نے یوم اقبال پر اسکولوں ، کالجز اور تعلیمی اداروں میں خصوصی پروگرامز کا انعقاد کرنے پر بھی زور دیا تاکہ نوجوان نسل کو علامہ اقبال کی سوچ سے روشناس کرایا جا سکے۔

Scroll To Top