این آر او کیس:آصف زرداری کا دس سال کے اثاثوں کی تفصیلات دینے سے انکار

  • کسی شخص کے ماضی کے اثاثوں کی تفصیلات نہیں مانگی جاسکتیں ، یہ بنیادی حقوق کے خلاف ہے،نظرثانی درخواست کا متن

زرداریاسلام آباد(الاخبار نیوز) سابق صدر آصف زرداری نے دس سال کے اثاثوں کی تفصیل دینے سے انکارکر دیا.تفصیلات کے مطابق آصف علی زرداری نے دس سال کے اثاثوں کی تفصیل پیش کرنے کے حکم کو آئین کے منافی قرار دیتے ہوئے سپریم کورٹ میں نظرثانی درخواست دائر کردی.سپریم کورٹ نےملکی وغیر ملکی اثاثہ جات کی تفصیلات جمع کرانےکاحکم دیا تھا، البتہ آصف علی زرداری نے موقف اختیار کیا کہ الیکشن کمیشن بھی ایک سال کی تفصیل طلب کرتا ہے. آصف زرداری نےعدالت میں دی گئی نظرثانی درخواست میں سوالات اٹھائے ہیں کہ کیایہ عدالتی حکم بنیادی حقوق کے آرٹیکل 184/3 کے تحت آتا ہے؟انھوں نے سوال کیا کہ کیا بے نظیربھٹو کے اثاثوں کی تفصیل مانگنا قبرکے ٹرائل کے مترادف نہیں؟ کیا بچوں کی بھی ایک عشرے کی اثاثوں کی تفصیلات طلب کی جا سکتی ہیں؟ کیا سپریم کورٹ کی جانب سے حکم نامہ آئین کےخلاف نہیں؟درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ انکم ٹیکس قانون کے تحت 5 سال سے زائد تفصیلات طلب نہیں کی جاسکتیں، الیکشن کمیشن میں بھی اثاثوں کی ایک سال تک تفصیل مانگی جاسکتی ہے.درخواست کے مطابق الیکشن قوانین کے تحت امیدوار، اہلیہ، بچوں کی تفصیلات پوچھی جاتی ہیں، آصف زرداری ایسے مقدمات میں پہلےہی بری ہوچکے ہیں.درخواست کے متن کے مطابق اثاثوں کی تفصیلات فراہم کرنے کاحکم آرٹیکل 13 کی خلاف ورزی ہے، حکم نامہ قوانین کی نفی ہے، کہیں نہیں لکھا اثاثے یابزنس ظاہر کیا جائے.

Scroll To Top