گرینڈ حیات ٹاورز کیس : نیب کا معاملے بارے ریفرنس دائر کرنے کافیصلہ

  • دیکھنا ہے کہ معاملے میں ذمہ داران نے اختیارات کا غلط استعمال کیا یا نہیں،چیف جسٹس

گرینڈ حیات ٹاورز کیس

اسلام آباد(آن لائن) سپریم کورٹ میں گرینڈ حیات ٹاورز کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے کہا ہے کہ اسلام آباد کے سنگل بینچ کا فیصلہ ڈویڑن بینچ نے برقرار رکھا ہے۔پراسکیوٹر نیب نے عدالت کا آگاہ کیا کہ گرینڈ حیات ٹاور کا معاملہ نیب اور ایف ائی اے کے پاس ہے۔ نیب نے انکوائریز کو تحقیقات میں بدل دیا ہے۔ جلد گرینڈ حیات ٹاورز معاملہ پر ریفرنس فائل کریں گیے۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ ایف ائی اے معاملہ کی تحقیقات کر رہا ہے۔ جس پر چیف جسٹص کا کہنا تھا کہ نیب تحقیقات کر رہا ہے۔ تو نیب کو کرنے دیں۔ ایف ائی اے کا کیا تعلق ہے۔اس موقع پر درخواستگزار کے وکیل نے موقف اختیا ر کیا اس کے موکل نے بیرون ملک سے گرینڈ حیات میں فلیٹ خریدا۔ انتظامیہ نے مجوزہ فلیٹ کسیدوسرے کو فروخت کر دیا۔جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ عدالت کے انسانی حقوق سیل میں درخواست دے دیں دیکھ لیں گے۔ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیلیں دائر ہونی ہیں۔ نیب بھی تحقیقات کر رہا ہے۔ ان تمام پہلوو¿ں کو مدنظر رکھنا ہے۔دیکھنا ہے کہ معاملہ میں ذمہ داران نے اختیارات کا غلط استعمال کیا یا نہیں۔آئینی اختیار کے اندر رہ کر جو کاروائی چلا سکے چلائیں گے۔ کیس کی سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کر دی گئی ۔

Scroll To Top