امریکہ آئی ایم ایف سے بیل آﺅٹ پیکج کے حصول میں مخالفت نہیں کریگا :فواد چوہدری

  • مائیک پومپیو کے حالیہ دورے کے بعد دو طرفہ معاملات میں کافی حد تک بہتری آئی ہے ، اس سے پہلے دونوں ممالک کے تعلقات ناہموار تھے،وزیر اطلاعات و نشریات
  • واشنگٹن پاکستان کو خوش حال دیکھنا چاہتا ہے تاکہ وہ علاقائی استحکام اور سلامتی کے لیے مثبت کردار ادا کرے،ترجمان محکمہ خارجہ
اسلام آباد:۔ وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کابینہ اجلاس میں ہونیوالے فیصلوں سے میڈیا کو آگاہ کر رہے ہیں

اسلام آباد (این این آئی) وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے کہاہے کہ امریکا نے یقین دہانی کرائی ہے کہ عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے بیل آو¿ٹ پیکج کے حصول میں پاکستان کی مخالفت نہیں کرے گا۔ایک انٹرویومیں فواد چوہدری نے کہا کہ گزشتہ ہفتے پاکستان کے دورے پر آنے والے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے یقین دلایا ہے کہ آئی ایم ایف سے بیل آوٹ پیکج پرامریکا پاکستان کی مخالفت نہیں کرے گا۔فواد چوہدری نے کہا کہ مائیک پومپیو کے دورہ پاکستان کے بعد کافی چیزیں ہموار ہوئیں، تعلقات بہترہوئے۔انہوں نے کہا کہ امریکی وزیرخارجہ کی پاکستان آمد سے پہلے دونوں ممالک کے تعلقات منقطع تھے۔فواد چودھری کے بیان پر ردِ عمل کے لیے رابطہ کرنے پر امریکہ کے محکمہ خارجہ کے ترجمان نے وائس امریکہ کی نامہ نگار نائیکی چنگ کو بتایا کہ واشنگٹن پاکستان کو خوش حال دیکھنا چاہتا ہے تاکہ وہ علاقائی استحکام اور سلامتی کے لیے مثبت کردار ادا کرے۔امریکی ترجمان کا مزید کہنا تھا، ہم سمجھتے ہیں کہ پاکستان نے آئی ایم ایف سے اعانت کی درخواست نہیں کی ہے۔ اگر وہ اعانت کی درخواست کرتے ہیں تو ہم تمام پہلوو?ں کو ویسے ہی بغور جائزہ لیں گے جیسے قرضے کی دیگر درخواستوں کا لیتے ہیں۔پاکستان میں گزشتہ ماہ برسرِ اقتدار آنے والی والی نئی حکومت ملک کے کم ہوتے ہوئے غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر کی وجہ سے پیدا ہونے والے اقتصادی بحران سے نمٹنے کے لیے کوشاں ہے۔پاکستانی حکام کا کہنا ہے کہ وہ اس حوالے سے داخلی پالیسیاں سخت کر رہے ہیں تاکہ آئی ایم ایف سے کسی بیل آو¿ٹ پیکچ کے لیے رجوع نہ کرنا پڑا۔واضح رہے کہ پاکستان 1980ئ کی دہائی سے اب تک 14 بار آئی ایم ایف سے قرض کے لیے رجوع کر چکا ہے۔

Scroll To Top