فوج قومی تعمیر و ترقی میں بڑھ چڑھ کر حصہ لےتی رہے گی، جنرل قمر جاوید باجوہ

  • آرمی چیف کی چیف جسٹس سے ملاقات : ڈیمز کی تعمیر کیلئے ایک ارب 59 لاکھ روپے کا چیک پیش ، پاک فوج کے افسران بشمول سول افسران نے دو دن جبکہ جونیئرکمیشنڈ افسران اور سپاہیوں نے ایک ایک دن کی تنخواہ عطیہ کر دی
  • دیامر بھاشا، مہمند ڈیمز کی تعمیر کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں ، اس قومی مقصد کےلئے پاک فوج کے تمام رینکس نے اپنا حصہ ڈالا ہے، آرمی چیف کا چیف جسٹس کے نام خط ، وزیراعظم نے بھی ڈیمز کی تعمیر کےلئے سپریم کورٹ فنڈ سے قوم کو بھرپور تعاون کیلئے کہا ہے
  • ڈیمز کی جلداز جلد تعمیر ضروری ہے ، منصوبوں کی نگرانی خود کرنے کو تیارہوں ،ملک میں دو بڑے ڈیموں سمیت صرف 185 ڈیمز ہیں جبکہ بھارت میں 5ہزار اور چین میں 4 ہزار بڑے ڈیموں سمیت 84 ہزار ڈیمز ہیں، وزیر اعظم کی چیئرمین واپڈا سے گفتگو
اسلام آباد:۔ چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کو ڈیمز فنڈ کیلئے ایک ارب 59لاکھ روپے کا چیک پیش کر رہے ہیں

اسلام آباد:۔ چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کو ڈیمز فنڈ کیلئے ایک ارب 59لاکھ روپے کا چیک پیش کر رہے ہیں

اسلام آباد (این این آئی)آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے چیف جسٹس پاکستان سے ملاقات کرکے ڈیمز کی تعمیر کےلئے فنڈز کا چیک دیا۔ترجمان سپریم کورٹ کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار سے ملاقات کی جس میں انہوں نے ڈیمز کی تعمیر کےلئے پاک فوج کی جانب سے ایک ارب 59 لاکھ روپے کا چیک دیا۔ترجمان سپریم کورٹ کے مطابق آرمی چیف نے چیف جسٹس پاکستان کو خط بھی تحریر کیا جس میں دیامر بھاشا اور مہمند ڈیمز کی تعمیر کے فیصلے کا خیر مقدم کیا گیا۔آرمی چیف کے خط میں کہا گیا کہ اس قومی مقصد کے لیے پاک فوج کے تمام رینکس نے اپنا حصہ ڈالا ہے، پاک فوج کے افسران بشمول سول افسران نے دو دن کی تنخواہ ڈیمز کےلئے دی جبکہ جونیئرکمیشنڈ افسران اور سپاہیوں نے ڈیمز کے لیے ایک ایک دن کی تنخواہ دی ہے۔واضح رہے کہ دیامر بھاشا اور مہمند ڈیمز کی تعمیر کےلئے سپریم کورٹ نے فنڈ قائم کیا ہے جس میں وزیراعظم عمران خان نے قوم سے بھی حصہ ڈالنے کی اپیل کی ہے۔ دریں اثناءگزشتہ روز وزیراعظم عمران خان سے واٹر اینڈ پاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (واپڈا)کے چیئرمین نے ملاقات کی جس میں وزیراعظم نے دیامر بھاشا اور مہمند ڈیمز کی جلد تعمیر پر زور دیا۔وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں کہا کہ انہوں نے جنرل(ر)مزمل حسین نے وزیراعظم ہاﺅس میں ملاقات کی۔عمران خان نے بتایا کہ انہوں نے چیئرمین واپڈا پردیامر بھاشا اورمہمند ڈیمز کی جلد تعمیر پر زور دیا ہے اور کہا ہے کہ میں خود ڈیمز کے منصوبوں کی نگرانی کرسکتا ہوں۔ وزیراعظم عمران خان نے مزید کہا کہ پاکستان میں دو بڑے ڈیموں سمیت صرف 185 ڈیمز ہیں جبکہ اس کے برعکس بھارت میں 5ہزار اور چین میں 4 ہزار بڑے ڈیموں سمیت 84 ہزار ڈیمز ہیں۔عمران خان نے مزید کہا کہ ہمیں پاکستان کو بڑھتے ہوئے آبی بحران سے محفوظ بنانا ہے، چیئرمین واپڈا سے ملاقات کے دوران دیامر بھاشا اور مہمنڈ ڈیمز کی جلد تکمیل پر زور دیا ہے اور ان سے کہا ہے کہ معاملے کی افادیت کے پیش نظر منصوبے کی نگرانی میں اپنے ذمے لے سکتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے حصے میں سالانہ 45 ملین ایکڑ فٹ پانی آتا ہے جس کا 80 فیصد 3 ماہ جبکہ بقیہ 20 فیصد باقی 9 ماہ میں آتا ہے۔قبل ازیں اپنے ٹوئٹر پیغام میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کو قرضوں پر سود ادا کرنےکے لیے عالمی اداروں سےامداد لینا پڑتی ہے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بیان میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ وفاق، خیبرپختونخوا اور پنجاب میں سرکاری زمین، رہائش گاہوں کے 90 فیصد اعداد و شمار ملے ہیں، سرکاری زمین کی مالیت سے متعلق اعداد و شمار ہوش اڑا دینے کی حد تک حیرت ناک ہیں۔انہوں نے کہا کہ 34,459 کنال سرکاری زمین دیہی،17,035 کنال سے زائد شہری علاقوں میں ہے، صرف شہری زمین پر تعمیرات کی مالیت 300 ارب روپے سے زائد ہے۔وزیراعظم کاکہنا تھا کہ پاکستان کو قرضوں پر سود ادا کرنے کے لیے عالمی اداروں سےامداد لینا پڑتی ہے، پاکستان جیسا ملک کیسے 300 ارب روپے ایک جگہ منجمد کرسکتا ہے؟

Scroll To Top