پنجاب ، کے پی کے ، سندھ کے پولیس سربراہان تبدیل

  • محمد طاہر آئی جی پنجاب ، صلاح الدین محسود خیبرپختونخوا ، کلیم امام سندھ تعینات ، موجودہ آئی جی سندھ امجد جاوید سلیمی کو اسٹیبلشمنٹ ڈویژن رپورٹ کرنے کی ہدایت، آئی جی پنجاب کیلئے جو نام بھجوائے گئے تھے ان میں خالق دادلک اور فیصل شاہکار بھی شامل تھے
  • آئی جی سندھ مقرر ہونے والے سید کلیم امام اس وقت آئی جی پنجاب کے عہدے پر فائز ہیں اس سے پہلے وفاقی دارالحکومت میں بھی فرائض سر انجام دے چکے ہیں، صلاح الدین محسود اس سے قبل بھی آئی جی خیبر پختونخوا رہ چکے ہیں

پولیس سربراہان تبدیل

لاہور(الاخبار نیوز) وفاقی حکومت نے تین صوبوں کے انسپکٹر جنرل پولیس کو تبدیل کر دیا۔وفاقی حکومت کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق صلاح الدین محسود کو آئی جی خیبرپختونخوا تعینات کر دیا گیا جب کہ کلیم امام کو آئی جی سندھ مقرر کر دیا گیا ہے۔اعلامیے کے مطابق محمد طاہر کو سربراہ پنجاب پولیس مقرر کر دیا گیا ہے جب کہ آئی جی سندھ امجد جاوید سلیمی کو اسٹیبلشمنٹ ڈویژن رپورٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔خیال رہے کہ صلاح الدین محسود اس سے قبل بھی آئی جی خیبر پختونخوا پولیس کی ذمہ داریاں انجام دے چکے ہیں جب کہ کلیم امام آئی جی پنجاب رہ چکے ہیں اور انہیں اب سندھ پولیس کا سربراہ مقرر کر دیا گیا ہے۔ محمد طاہر اس وقت خیبر پختونخوا پولیس کے سربراہ کے طور پر خدمات انجام دے رہے تھے وفاقی حکومت نے پنجاب کو آئی جی کی تعیناتی کیلئے 3 افسروں کے نام بھجوائے تھے جن میں خالق دادلک اور فیصل شاہکار کے نام بھی شامل تھے لیکن قرعہ محمد طاہر کے نام نکلا۔محمد طاہر کا شمار ایک فرض شناس پولیس افسر کے طور پر کیا جاتا ہے، انھیں تعیناتی کے حوالے سے آگاہ کر دیا گیا ہے۔ادھر صلاح الدین خان کو نیا آئی جی خیبر پختونخوا تعینات کر دیا گیا ہے۔

Scroll To Top