جعلی اکاو¿نٹس منجمد کرنے میں تاخیر سے کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشنز کا انکشاف

  • تاخیر کے باعث اومنی گروپ کی 6 کمپنیوں سے کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشنز ہوئیں،سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں انکشاف
  • 41 میں سے 10 اکاو¿نٹس منجمد کرنے میں تاخیر پر متعلقہ بینک کا اسسٹنٹ وائس پریزیڈنٹ افضل صادق معطل ،تحقیقات جاری

جعلی بینک اکاو¿نٹس: آصف زرداری کی حفاظتی ضمانت منظوراسلام آباد(الاخبار نیوز)جعلی بینک اکاﺅنٹس کیس میں وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کی جانب سے سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں اس بات کا انکشاف ہوا ہے کہ بینک اکاو¿نٹس منجمد ہونے میں تاخیر کے باعث اومنی گروپ کی 6 کمپنیوں سے کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشن ہوئی۔ نجی ٹی وی کے مطابق ایف آئی اے کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ اکاو¿نٹ منجمد ہونے میں تاخیر کے باعث اومنی گروپ نے نیشنل بینک سے کروڑوں روپے کی ڈیبٹ ٹرانزیکشن کی۔ عدالت میں جمع کرائے گئے اس دستاویز میں یہ بات بھی سامنے آئی کہ نیشنل بینک انتظامیہ نے ڈویڑنل ہیڈ کو اومنی گروپ کی 6 کمپنیوں کے 41 بینک اکاو¿نٹ منجمد کرنے کی ہدایت دی تھیں۔رپورٹ کے مطابق یہ 41 بینک اکاو¿نٹس پاک ایتھونول، ٹنڈو اللہ یار شوگر مل، اومنی پرائیویٹ لمیٹڈ، چمبر شوگر مل اور انصاری شوگر مل کے تھے۔دستاویز میں یہ بات سامنے ا?ئی کہ بینک کی جانب سے 41 میں سے 10 اکاو¿نٹ منجمد کرنے میں تاخیر کی گئی، جس کی وجہ سے ڈیبٹ ٹرانزیکشن کی گئیں۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ بینک اکاو¿نٹس منجمد کرنے میں تاخیر برتنے پر اسسٹنٹ وائس پریزیڈنٹ افضل صادق کو معطل بھی کیا گیا۔

Scroll To Top