تعلیمات رسول پر عمل پیرا ہو کر ایک عظیم قوم بنیں گے، عمران خان

  • پاکستان کبھی کسی دوسرے کی جنگ میں شرکت نہیں کرے گا،میرا جینا مرنا پاکستان کے ساتھ ہے، سول اور عسکری قیادت کا کردار اور مقصد ایک ہی ہے، ہم سب متحد ہیں، سول اور عسکری تعلقات میں کوئی مسئلہ نہیں ہے، ہمیں اپنے اداروں کو مضبوط کرنے کی ضرورت ہے
  • وزیراعظم نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے ہمراہ یاد گار شہداءپر پھولوں کی چادر چڑھائی اور فاتحہ خوانی کی، جی ایچ کیو میں منعقد ہونے والی یوم دفاع و شہداءکی پروقار مرکزی تقریب سے خطاب بھی کیا
راولپنڈی:۔آرمی چیف جنر ل قمر جاوید باجوہ اور وزیر اعظم عمران خان یادگار شہداءپر پھولوں کی چادرچڑھانے کے بعد فاتحہ خوانی کر رہے ہیں

راولپنڈی:۔آرمی چیف جنر ل قمر جاوید باجوہ اور وزیر اعظم عمران خان یادگار شہداءپر پھولوں کی چادرچڑھانے کے بعد فاتحہ خوانی کر رہے ہیں

راولپنڈی(الاخبار نیوز) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان کبھی بھی کسی کی جنگ میں شرکت نہیں کرے گا۔وزیراعظم عمران خان نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے ہمراہ یاد گار شہداء پر پھولوں کی چادر چڑھائی اور فاتحہ خوانہ کی۔بعد ازاں جی ایچ کیو میں ہونے والی یوم دفاع کی مرکزی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اگر کرکٹ نہ کھیلتا تو آج ایک ریٹائرڈ فوجی ہوتا۔انہوں نے کہا کہ میرا قوم سے وعدہ ہے کہ پاکستان کبھی کسی کی جنگ میں شرکت نہیں کرے گا اور ہماری خارجہ پالیسی بھی پاکستان کی بہتری کے لیے ہو گی۔وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں شرکت کے خلاف تھا لیکن جس طرح سے پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کامیابیاں حاصل کیں دنیا میں کسی بھی فوج نے اس طرح کی کامیابیاں حاصل نہیں کیں۔ان کا کہنا تھا کہ ملک میں اس وقت ایک ادارہ ہے جو کام کر رہا ہے، فوج ایسا ادارہ ہے جہاں میرٹ کا نظام ہے، ہمیں اپنے ادارے مضبوط کرنے ہیں کیونکہ سیاسی مداخلت سے ادارے تباہ ہو جاتے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان ایسا ملک ہے جو اسلام کے نام پر قائم ہوا تھا لیکن آج قوم مسائل میں گھری ہوئی ہے اور ملک قرضوں میں ڈوبا ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ ملک اٹھے گا اور ایک عظیم قوم بنے گی، عظیم قوم اس وقت بنے گی جب ایک چھابڑی والا، ایک مزدور، ایک سپاہی اور سب یہ سمجھیں گے کہ میں تو محنت کر رہا ہوں لیکن میرا بچہ جب سرکاری اسکول سے نکلے گا تو وہ ڈاکٹر اور انجینئر بھی بن سکتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ جب کمزور طبقہ یہ سمجھے گا کہ انہیں انصاف ملے گا تو قوم اوپر اٹھے گی۔وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ سول ملٹری تعلقات میں کوئی مسئلہ نہیں ہے، ہم سب کا ایک ہی مشترکہ مقصد ہے کہ مل کر اس ملک کو آگے لے کر جانا ہے۔انہوں نے کہا کہ جب کوئی قوم متحد ہوتی ہے تو اعلیٰ مقام حاصل کرتی ہے، میرا جینا مرنا اس ملک کے لیے ہے، یہ ملک اوپر جائے گا تو میں اوپر جاو¿ں گا اور یہ ملک نی چے جائے گا تو میں بھی نیچے جاو¿ں گا۔عمران خان نے قوم کے شہدائ کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ اللہ رب العزت نے انبیائ کے بعد سب سے زیادہ نعمتیں اور درجہ شہیدوں کو دیا ہے۔تقریب میں وزیر دفاع پرویزخٹک، وزیر خزانہ اسد عمر، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر اطلاعات فواد چوہدری، وزیر ریلوے شیخ رشید، وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی، قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف، چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو، سابق کرکٹ کپتان شاہد خان آفریدی اور دیگر اہم شخصیات شریک ہوئے۔

Scroll To Top