100 روز ہ ایجنڈے پر عملدرآمد کلیدی ہدف ہے:پنجاب پولیس کو غیر سیاسی بنانا اولین ترجیح ہے، عمرا ن خان

  • گڈگورننس کے لیے پ±رعزم ہیں ،کفایت شعاری، بدعنوانی کا خاتمہ اور میرٹ کی بالادستی ترجیحات ہیں ،وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار ‘ کابینہ اراکین اور سینئر بیورو کریسی سے ملاقات بہت تعمیری رہی، ناصر درانی کو پنجاب پولیس ریفارمز ٹاسک فورس کا سربراہ مقرر کیا ہے، وزیر اعظم کا ٹوئٹر پیغام
  • شجرکاری نہ کی گئی تو آئندہ سالوں میں ملک ریگستان بن جائے گا، وطن عزیز کو سرسبز و شاداب اور آلودگی سے پاک کرینگے ¾آئندہ پانچ سالوں میں 10 ارب پودے لگائے جائیں گے، گرین پاکستان مہم کا حصہ بن کر آئندہ نسلوں کو ماحولیاتی آلودگی سے بچائیں گے، ہری پور میں پودالگا کر وزیر اعظم نے مہم کا باضابطہ افتتاح کردیا
 ہری پور:۔ وزیر اعظم عمران خان پودالگا کر ٹین بلین ٹری سونامی کے باضابطہ افتتاح کے بعد دعا مانگ رہے ہیں

ہری پور:۔ وزیر اعظم عمران خان پودالگا کر ٹین بلین ٹری سونامی کے باضابطہ افتتاح کے بعد دعا مانگ رہے ہیں

اسلام آباد( ایجنسیاں)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہماری تمام تر ترجیح 100 روزہ پروگرام کو یقینی بنانے پر ہے ہم پاکستان میں گورننس کے نظام میں تبدیلی کیلئے پر عزم ہیں ہماری توجہ کرپشن کے خاتمے‘ سادگی اور میرٹ پر ہوگی۔ اتوار کو سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئیٹر پر اپنی ٹوئیٹ میں عمران خان نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار ‘ کابینہ ارکان اور سینئر بیورو کریسی سے ملاقات بہت تعمیری رہی انہوں نے کہا کہ میری سابق آئی جی کے پی کے ناصر درانی سے بھی ملاقات ہوئی انہوں نے کے پی کے میں پولیس ریفارمز شروع کی تھیں اب وہ پنجاب میں پولیس ریفارمز ٹاسک فورس کی سربراہی کررہے ہیں۔ میں نے ناصر درانی سے کہا ہے کہ ان کی سب سے اولین ترجیح پنجاب پولیس کو غیر سیاسی بنانا ہے۔ دریں اثناءوزیراعظم عمران خان نے ہری پور میں پودالگا کر ٹین بلین ٹری سونامی کا باضابطہ افتتاح کر دیا ہے اور کہا ہے کہ پورے ملک کو سرسبز و شاداب اور آلودگی سے پاک کرینگے ¾آئندہ پانچ سالوں میں 10 ارب پودے لگائے جائیں گے، گرین پاکستان مہم کا حصہ بن کر آئندہ نسلوں کو ماحولیاتی آلودگی سے بچایا جا سکتا ہے، ہمارے گلیشیئرز پگھل رہے ہیں، شجرکاری نہ کی تو آئندہ سالوں میں ہمارا ملک ریگستان بن جائے گا ۔اتوار کو ضلع ہری پور میں پودا لگا کر 10 بلین ٹری سونامی کا باضابطہ افتتاح کرنے کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ شجرکاری مہم کا مقصد گلوبل وارمنگ سے مقابلہ کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں آئندہ پانچ سال کے دوران دس ارب پودے لگانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے، ہمارا مقصد پورے پاکستان کو سرسبز و شاداب کرنا اور ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانا ہے، درخت آکسیجن فراہم کرنے کا سب سے بڑا ذریعہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ نسلوں کو شجرکاری کی اہمیت سے آگاہ کرنے کے لئے شجرکاری اور صفائی کو سکولوں کے نصاب میں شامل کیا جائے گا جبکہ بچوں کو صفائی اور شجرکاری کے حوالے سے ٹریننگ دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ گلوبل وارمنگ اور ماحولیاتی آلودگی کے حوالے سے ہمارا ملک ساتویں نمبر پر ہے۔ گرین پاکستان مہم کا حصہ بن کر آئندہ نسلوں کو ماحولیاتی آلودگی سے بچایا جا سکتا ہے، جہاں بھی خالی زمین میسر ہو گی وہاں پودے لگائیں گے، اگر درخت نہ لگائے تو ملک ریگستان بن جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے ابتدائی طور پر پورے ملک میں دو سو مقامات پر یہ مہم شروع کی کی ہے، 10 ارب پودے لگانے کا ہمارا ہدف ہے، یہ مہم آئندہ پانچ سال تک ملک بھر میں جاری رہے گی۔ انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ سارے پاکستان کو ہم نے ہرا کرنے کا ارادہ کر لیا ہے، یہ کسی ایک فرد کا مسئلہ نہیں پوری قوم کا مقصد ہے، ہمارے گلیشیئرز پگھل رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شہروں میں بڑے پیمانے پر پودے لگائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں جنگلات تباہ ہو چکے ہیں۔ قبل ازیں انہوں نے ”پلانٹ فار پاکستان“ شجرکاری مہم کے تحت ضلع ہری پور میں پودا لگا کر ”10 بلین ٹری سونامی“ منصوبے باضابطہ افتتاح کر دیا ہے۔ واضح رہے کہ اتوار کے روز ملک کے بڑے شہروں میں 15 لاکھ پودے لگائیں جائیں گے جبکہ سرکاری محکمہ جات، ملٹری فورسز، این جی اوز، طالب علم اور شہریوں کی بڑی تعداد ”پلانٹ فار پاکستان“ شجرکاری مہم میں حصہ لے رہی ہے۔

Scroll To Top