پیمرا ،پریس کونسل ختم کرنیکا فیصلہ:مریم نواز کی ایما پر من پسند میڈیا کو اربوں روپے کے اشتہارات دیئے گئے، فواد چوہدری

  • مریم نواز نے وزیر اعظم ہاﺅس میں میڈیا سیل قائم کر رکھا تھا جس سے وہ میڈیا کو کنٹرول کرتی تھیں،چار سال میں چالیس ارب سے زائد کے اشتہارات دیے گئے،تحقیقات کےلئے معاملہ اطلاعات کی قائمہ کمیٹی کے سپرد کر دیا گیا ہے
  • پاکستان الیکٹرانک میڈیا اتھارٹی(پیمرا) اور پریس کونسل آف پاکستان ختم کرکے پاکستان میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی بنارہے ہیں جو نہ صرف الیکٹرانک بلکہ پرنٹ اور سوشل میڈیا کو بھی دیکھے گی، وزیر اطلاعات کا سینٹ میں خطاب

نواز شریف ، مریم نواز کا نام ای سی ایل میں شاملاسلام آباد( الاخبار نیوز)سینیٹ میں سابق وزیرِ اعظم نواز شریف کی صاحب زادی مریم نواز کے میڈیا سیل کا تذکرہ ، تحقیقات کے لیے معاملہ قائمہ کمیٹی کے سپرد کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ (ن) کی رہنما اور سابق وزیرِ اعظم کے یوتھ پروگرام کی چیئر پرسن مریم نواز نے اپنا ایک میڈیا سیل بنا رکھا تھا جس کے ذریعے سابق دورِ حکومت میں اشتہارات دیے جاتے تھے۔وفاقی وزیرِ اطلاعات فواد چوہدری کے مطابق مذکورہ میڈیا سیل وزیرِ اعظم ہاﺅس میں بنایا گیا تھا جسے مریم نواز کنٹرول کرتی تھیں۔چار سال میں چالیس ارب سے زائد کے اشتہارات دیے گئے فواد چوہدری نے بتایا کہ گزشتہ دورِ حکومت میں اشتہارات مریم نواز کے میڈیا سیل کے ذریعے دیے جاتے تھے، گزشتہ چار سال میں وفاق اور پنجاب کے چالیس ارب سے زائد کے اشتہارات دیے گئے۔یہ انکشاف وفاقی وزیرِ اطلاعات فواد چوہدری نے سینیٹ میں خطاب کے دوران کیا، انھوں نے کہا کہ تحقیقات کے لیے یہ معاملہ اطلاعات کی قائمہ کمیٹی کے سپرد کر دیا گیا ہے۔ ماضی میں وفاقی حکومت نے 17 ارب اشتہارات پر خرچ کیے جس کی تحقیقات کی جائیں گیوزیراطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے ڈیفیکٹو مریم نواز کا لفظ ایوان میں بولا تو اس موقع پر سابق وزیراعظم کے چہتے سینیٹرز نے کروٹیں بدلنا شروع کردیں اور چند ہی منٹ بعد بہانہ بنا کر ایوان سے واک آﺅٹ کر گئے ۔واضح رہے کہ 17ارب روپے کے وفاق اور 30ارب روپے کے پنجاب کی جانب سے میڈیا کو اشتہارات جاری کیے گئے تھے ۔ دریں اثناءوفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی اور پریس کونسل کو ختم کرکے پرنٹ ،الیکٹرانک اور سوشل میڈیا کیلئے ایک ہی اتھارٹی بنانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی کارروائی کو دکھانے کےلئے ایک نئے سرکاری چینل کھولا جائیگا ۔وفاقی وزیر اطلاعات نے بتایا کہ میڈیا کے لوگوں کی آراء کے ساتھ فیصلہ کیا ہے کہ پیمرا اور پریس کونسل دونوں کو ختم کررہے ہیں، پاکستان میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی بنارہے ہیں جو نہ صرف الیکٹرانک بلکہ پرنٹ میڈیا اور اس کے ساتھ سوشل میڈیا کو بھی دیکھے گی۔انہوں نے کہا کہ ان سب چیزوں کے لیے ایک ہی ریگولیٹری اتھارٹی ہونی چاہیے، تمام میڈیا پر ایک ہی قوانین اور سنسر لاگو ہونے چاہئیں، اس سے ریاست کے وسائل بچیں گے، تمام اتھارٹیز کو ضم کرکے پروفیشنلز کی اتھارٹی بنائے گی جس میں میڈیا کے لوگ بھی شامل ہوں گے۔فواد چوہدری کا کہنا تھاکہ آنے والے دنوں میں وزارت اطلاعات، ریگولیٹری باڈیز اور پی ٹی وی میں بھی تبدیلیاں دیکھنے کو ملیں گے، پی ٹی وی میں سنسر شپ ختم کردی گئی ہے، اب لوگ کہتے ہیں کہ پی ٹی وی اپوزیشن کو زیادہ ٹائم دے رہا ہے اس پر اپوزیشن کو ہمارا شکریہ ادا کرنا چاہیے۔

Scroll To Top