وزیراعظم سے ملاقات میں ترک صدر کی مقبوضہ کشمیر میں فیکٹ فائنڈنگ کمیشن بھجوانے کی پیشکش

وزیراعظم نوازشریف آج امریکی صدر باراک اوباما سے بھی ملاقات کریں گے۔ فوٹو؛ فائل

نیویارک: وزیراعظم نوازشریف اور ترک صدر رجب طیب اردوگان کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں ترک صدر نے مقبوضہ کشمیر میں فیکٹ فائنڈنگ کمیشن بھجوانے کی پیش کش کی۔

وزیراعظم نوازشریف ان دنوں امریکا میں موجود ہیں جہاں وہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کریں گے جب کہ اس موقع پر وزیراعظم کی عالمی رہنماؤں سے ملاقاتوں کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ وزیراعظم نوازشریف نے ترک صدر رجب طیب اردوگان سے ملاقات کی جس میں نوازشریف نے ترک صدر کو مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے ظلم و بربریت سے آگاہ کیا جب کہ ترک صدر طیب اردوگان نے ترکی کی جانب سےبطور چیرمین او آئی سی مقبوضہ کشمیر میں فیکٹ فائنڈنگ کمیشن بھجوانے کی پیشکش کی۔

وزیراعظم نوازشریف اور ترک صدر کے درمیان ملاقات 15 منٹ تک جاری رہی جس میں طیب اردوگان نے مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے کہا کہ او آئی سی کا انسانی حقوق کمیشن صورتحال کا جائزہ لینے مقبوضہ کشمیر جائے گا۔ اس موقع پر وزیراعظم نوازشریف کا کہنا تھا کہ نیوکلیئر سپلائرز گروپ میں ترکی کے تعمیری کردار پر مشکور ہیں، دونوں ملکوں کے تعلقات کے لیے اعلیٰ سطح کی تزویراتی کونسل کا کردار اہمیت کا حامل ہے۔ وزیراعظم نے پاکستان میں مختلف شعبوں میں ترک کمپنیوں کی خدمات کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ترک تاجر پاکستان میں سرمایہ کاری سے فائدہ اٹھائیں، ہم دونوں ملکوں کےدرمیان آزاد تجارتی معاہدے کو حتمی شکل دیں گے جس سے دو طرفہ تجارتی حجم میں مزید اضافہ ہوگا۔

دوسری جانب وزیراعظم نواز شریف آج امریکی وقت کے مطابق  سہ پہر 3:30 بجے مہاجرین ٹرسٹی کونسل کانفرنس میں شریک ہوں گے جہاں وہ امریکی صدر اوباما سے ملاقات کریں گے جس میں دونوں رہنماؤں کے درمیان مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا جائے گا، پاکستانی وقت کے مطابق وزیراعظم نواز شریف اور صدر اوباما کی ملاقات رات 12:30 بجے کے بعد ہوگی۔

Scroll To Top