منی لانڈرنگ کیس: انور مجید کی شوگر مل پر رینجرز اور ایف آئی اے کا چھاپہ

  • 2 گھنٹے تک شوگر مل کے ریکارڈ روم کی تلاشی ، دستاویزات کی چھان بین ،اومنی گروپ کی تمام 16 شوگر ملز کا مرکزی ریکارڈ بھی قبضے میں لے لیا، آئی ٹی انچارج عبدالرشید آرائیں، اکاو¿نٹنٹ افتخار احمد، ایڈمن افسر سوڈل رند اور انجنیئرجاوید گرفتار
  • 4 ایس ایم جی رائفلز اور 7 کلاشنکوف بھی برآمد،یادرہے کہ منی لانڈرنگ کیس میں سابق صدر آصف زرداری کے قریبی ساتھی نجی بینک کے سربراہ حسین لوائی اور اومنی گروپ کے سربراہ انور مجید کو ایف آئی اے پہلے ہی گرفتار کرچکی ہے اور تحقیقات جاری ہیں

ایف آئی اے

سکھر(الاخبار نیوز) منی لانڈرنگ کیس میں نامزد ملزم اومنی گروپ کے مالک انور مجید کی کھوسکی شوگر مل پر ایف آئی اے اور رینجرز کی بھاری نفری نے چھاپہ مارا اور 4 ملازمین کو گرفتار کرلیا۔سندھ کے ضلع کھوسکی میں سابق صدر آصف علی زرداری کے قریبی ساتھی اور اومنی گروپ کے مالک انورمجید کی شوگرمل پر ایف آئی اے اور رینجرز نے چھاپہ مارا ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق کھوسکی ٹاو¿ن میں واقع شوگر مِل پر ایف آئی اے کی 2 اور رینجرز کی 7 گاڑیاں پہنچیں۔ چھاپے سے قبل مِل کے تمام داخلی و خارجی راستے بند کردیئے گئے۔چھاپا مار ٹیم کے ہمراہ سندھ بینک کا عملہ بھی موجود تھا۔ سیکورٹی اہلکاروں نے 2 گھنٹے تک شوگر مل کے ریکارڈ روم کی تلاشی لی اور دستاویزات کی چھان بین کی۔ اس موقع پر ریکارڈ روم کے گرد اہلکار تعینات رہے اور کسی کو قریب جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے شوگر مل کے آئی ٹی انچارج عبدالرشید آرائیں، اکاو¿نٹنٹ افتخار احمد، ایڈمن افسر سوڈل رند اور انجینیئرجاوید کو گرفتار کرلیا۔۔۔ذرائع کے مطابق وفاقی تحقیقاتی ایجنسی نے اومنی گروپ کی تمام 16 شوگر ملز کا مرکزی ریکارڈ حاصل کرلیا اور اسلحہ بھی برآمد کیا۔ایف آئی اے ذرائع کے مطابق چھاپہ منی لانڈرنگ کیس میں گرفتار ملزم کی نشاندہی پر مارا گیا اور اومنی گروپ کی تمام 16 شوگر ملز کا مرکزی ریکارڈ بھی قبضے میں لے لیا گیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ کھوسکی شوگر مل سے 4 ایس ایم جی رائفلز اور 7 کلاشنکوف بھی ملی ہیں۔واضح رہےکہ منی لانڈرنگ کیس میں سابق صدر آصف زرداری کے قریبی ساتھی نجی بینک کے سربراہ حسین لوائی اور اومنی گروپ کے سربراہ انور مجید کو ایف آئی اے گرفتار کرچکی ہے جن سے تحقیقات جاری ہیں۔

Scroll To Top