کپور خاندان کا راج کپور اسٹوڈیو فروخت کرنے کا فیصلہ

v

راج کپوراسٹوڈیو کا سنگ بنیاد اداکار راج کپور نے 1948ء میں اپنے ہاتھوں سے رکھا تھا (فوٹو: فائل)

 ممبئی: بالی ووڈ انڈسٹری سے وابستہ کپور خاندان نے مشہور راج کپور اسٹوڈیو کو فروخت کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ممبئی میں واقع کپور خاندان کے تاریخی اسٹوڈیو کی فروخت کے حوالے سے راج کپور کے بیٹے اور اداکار رشی کپور کا کہنا ہے کہ کچھ دنوں سے ہم اسٹوڈیو کو جدید ترین ٹیکنالوجی کے ذریعے تزئین و آرائش کے بارے میں سوچ رہے تھے لیکن حقیقت میں اس مٹی کے ڈھیر کو ازسرنو تعمیر کرنا ممکن نہیں اور پورا کپور خاندان اس بارے میں بہت جذباتی بھی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اب تک اسٹوڈیو کی تعمیر کے لیے مناسب سرمایہ کاری نہیں ہوئی کہ اسے مستقل بنیادوں پر چلایا جاسکے لیکن ہمیں اس ضمن میں ایک بڑے منصوبے پر کام کرنا ہوگا اور درست فیصلے کرنے ہوں گے کیوں کہ راج کپور اسٹوڈیو آتشزدگی سے پہلے ہی یہ ایک سفید ہاتھی بن چکا تھا اور نقصان میں جارہا تھا۔

رشی کپور نے کہا کہ اسٹوڈیو کو صرف چند فلموں، ٹی وی سیریلز اور اشتہارات کے لیے بک کیا جاتا تھا جبکہ لوگ شوٹنگ کے لئے رعایت پر بھی اصرار کرتے تھے ان تمام تر باتوں کو مد نظر رکھتے ہوئے سینے پر پتھر رکھ کر سوچ سمجھ کر اسٹوڈیو کو فروخت کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یاد رہے کہ راج کپوراسٹوڈیو کا سنگ بنیاد اداکار راج کپور نے 1948ء میں اپنے ہاتھوں سے رکھا تھا جہاں پہلی فلم ’آگ‘ شوٹ کی گئی، اسٹوڈیو کے بینر تلے بالی ووڈ کی کئی تاریخی فلمیں ریلیز ہوئی ہیں جن میں برسات (1949ء)، آوارہ (1951ء)، بوٹ پالش (1954ء)، شری 420 (1955ء) اور دیگر شامل ہیں۔

Scroll To Top