ریلوے میں نالائق او ر کام چوروں کی کوئی گنجائش نہیں ،شیخ رشید

  • 15 ستمبر سے دو نئی ٹرینیں چلانے کا اعلان، ادارے میں کرپشن ختم کرنے کیلئے پر عزم ہوں، وزیرریلوے
لاہور:۔ وزیر ریلوے شیخ رشید احمد میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں

لاہور:۔ وزیر ریلوے شیخ رشید احمد میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں

اسلام آباد (آن لائن ) وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے 15 ستمبر سے دو نئی ٹرینین چلانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہنہ کسی سے عناد ہے اور نہ محبت، میں صرف کام چاہتا ہوں، ریلوے میں نالائق اور کام چوروں کو نہیں چھوڑوں گا ۔5 سالہ کارکردگی رپورٹ کو پبلک کرنے کا فیصلہ کیا ہے، اب کوئی جھوٹ نہ بولے ، میں نے بھی آٹھ، نو سال سے جھوٹ بولنا چھوڑ دیا ہے میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشیداحمد کا کہنا تھا کہ ریلوے میں 60 سال سے کھڑی گاڑیوں کو نیلام کیا جائے گا،606 کوچز بیکار پڑی ہیں جبکہ 15 ستمبر سے دو نئی ٹرینیں چلائی جائیں گی،ریلوے میں نالائق اور کام چوروں کو نہیں چھوڑوں گا، نہ کسی سے عناد ہے نہ محبت ، کسی کو تبدیل نہیں کیا ہمیں کام سے غرض ہے،میں صرف کام چاہتا ہوں ، ریلوے میں اخراجات میں 15 فیصد کمی کا فیصلہ کیا گیا ہے ،بجلی کی بلنگ پر ایک ارب کا کٹ لگادیا ہے،فیصلہ کیا ہے کہ اس سال ریلوے کو خسارے سے نکالیں گے۔ان کا مزیدکہنا تھا کہ راولپنڈی تا لاہور اورکندیاں تاراولپنڈی ٹرین چلائی جائیں گی اورہرروز فریٹ کی تفصیل فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے،میں نے فریٹ میں 20 فیصد اضافے کا کہا ہے،ریلوے میں تین فریٹ افسروں کو معطل کردیا ہے،ہم نے آئن لائن ٹکٹنگ میں ٹریول ایجنٹس کو شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہے،فریٹ ٹریڈ کو بھی آن لائن کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ، جس کی یومیہ رپورٹ مجھے موبائل فون پر دی جائے گی۔ شیخ رشیداحمد کا مزیدکہنا تھا کہ ہم نے 5 سالہ کارکردگی رپورٹ کو پبلک کرنے کا فیصلہ کیا ہے،کہا ہے کہ نیب ریلوے سے جو معلومات مانگے فوری دے دیں،مزید 30 ریلوے سٹیشن کو اپ گریڈ کیا جائے گا،پانچ فائیوسٹار ہوٹلز کے لیے ہمارے پاس پلاٹس موجود ہیں جبکہ ریلوے کی 4 ہزار ایکڑ اراضی پرلوگ قابض ہیں،تمام سکول اورہسپتال نجی سیکٹر کو دینے کو تیار ہیں، تمام ریلوے کی زمین کے گرد درخت لگائے جائیں گے،ریلوے سے کرپشن کو ہمیشہ کے لیے ختم کرنا چاہتا ہوں ، چاہوں گا کہ ریلوے میں اب کوئی جھوٹ نہ بولے ، میں نے بھی آٹھ نو سال سے جھوٹ بولنا چھوڑ دیا ہے۔ انہوں نے ریلوے سے کرپشن کو ہمیشہ کے لیے ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ 5 سالہ کارکردگی رپورٹ کو پبلک کرنے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان ایکسپریس تیز گام سے زیادہ منافع میں چلی تھی، میں پاکستان ایکسپریس کی انکوائری میں بری ہوا تھا اور یہ واحد انکوائری تھی ۔ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں ڈی ایس سے کہا ہے کہ مجھے یہاں سے 10 ارب روپے چاہئیں۔

Scroll To Top