افغان شہرغزنی پرطالبان کا بڑا حملہ، جھڑپوں میں درجنوں ہلاکتیں

c

طالبان نے غزنی شہر پر دھاوا بولتے ہوئے متعدد سرکاری عمارتوں پر قبضہ کرلیا،فوٹو: رائٹرز

کابل: افغانستان کے شہر غزنی میں طالبان کے بڑے حملے  کے بعد فورسز اور عسکریت پسندوں میں شدید جھڑپیں جاری ہیں جس میں دونوں جانب سے  ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق دارالحکومت کابل سے دو گھنٹے کی مسافت پر واقعے غزنی شہر پر طالبان عسکریت پسندوں نے جمعہ کی علی الصبح دھاوا بولتے ہوئے متعدد سرکاری عمارتوں پر قبضہ کرلیا۔

ابتدائی طور پر طالبان کی جانب سے شہر پر مکمل کنٹرول حاصل کرنے کا دعویٰ کیا گیا تاہم چند گھنٹوں بعد افغان سیکورٹی فورسز اور امریکی فوج نے شدید جھڑپوں کے بعد سرکاری تنصیبات کو حملہ آوروں کے قبضے سے چھڑا لیا۔

غزنی  سٹی اسپتال کے ایڈمنسٹریٹر نے بتایا کہ عسکریت پسندوں سے لڑتے ہوئے 14سیکورٹی اہلکار ہلاک اور 20سے زائد زخمی ہوئے۔

صوبائی پولیس چیف نے خبررساں ادارے کو بتایا کہ  جوابی کارروائی میں 39 حملہ آورمارے گئے اور ان کی لاشیں تاحال سڑکوں پر پڑی ہیں۔

ادھر افغان میڈیا سے بات کرتے ہوئے امریکی فوج کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل مارٹن نے بتایا کہ افغان نیشنل ڈیفنس اور سیکورٹی فورسز نے غزنی کی سرکاری عمارتوں کا کنٹرول سنبھال لیا اور حملہ آوروں کو پیچھے دھکیل دیا گیا ہے۔

Scroll To Top