قائداعظم کی ذات پر کیچڑ اچھالنے والے مولانا فضل الرحمن کی فوج اور عدلیہ پر کھلم کھلا تنقید

  • محمود خان اچکزئی کے پہلو میں کھڑے ہو کر مولانا فضل الرحمن نے ملک کے اہم ترین اداروں فوج اور عدلیہ کے خلاف ہرزہ سرائی کرتے ہوئے انہیں انتخابی نتا ئج پر اثر انداز ہونے کا ذمہ دار قرار دے دیا
  • موصوف نے انتخابات میں مبینہ دھاندلی کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے 14اگست کو یوم آزادی منانے کی بجائے یوم جدوجہد منانے کا اعلان کیا اور مظاہرین سے ملکی اداروں کے خلاف نعرے بازی بھی کروائی

پشاور: امیر جمعیت علماءاسلام (ف) مولانا فضل الرحمن عوامی اجتماع سے خطاب کر رہے ہیں

اسلام آباد(الاخبار سپیشل) بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناحؒ کی ذات پر کیچڑ اچھالنے والے مولانا فضل الرحمن انتخابات میں شکست فاش کے بعد فوج اور عدلیہ کے خلاف ہرزہ سرائی پر کمربستہ ہوگئے ہیں بدھ کے روز اپوزیشن جماعتوں کی طرف سے الیکشن کمیشن آف پاکستان کے سامنے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن کہ جن کے پہلو میں مشہور زمانہ محمود خان اچکزئی موجود تھے اہم ترین قومی اداروں فوج اور عدلیہ پر کھلم کھلا الزام تراشی کرتے ہوئے کہا کہ ان اداروں کی مبینہ آشیرباد سے عوام کے مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالا گیا جس کو ہم ہرگز ہرگز قبول نہیں کریں گے اور اپنا احتجاج جاری رکھیں گے انہوں نے مزید کہا کہ نواز شریف کے پابند سلاسل ہونے سے کوئی فرق نہیں پڑتا ہم ان کی کمی محسوس نہیں ہونے دیں گے اور پر زور احتجاج جاری رکھیں گے حتیٰ کہ انہوں نے 14اگست کو یوم آزادی منانے کی بجائے یوم جدوجہد منانے کا اعلان کیا انہو ںنے تنقید جاری رکھتے ہوئے کہا کہ فوج اور عدلیہ نے اپنی غیر جانبداری کو مجروح کر دیا ہے اور اپنی ساکھ کو متاثر کیا ہے اس موقع پر مظاہرین نے بھی اداروں کے خلاف نعرہ بازی جاری رکھی۔ایم ایم ا ے کے سربراہ مولانافضل الرحمان نے کہا کہ جمہوریت پر شب خون برداشت نہیں کیا جا سکتا،جعلی وزیر اعظم کو اس باوقار منصب پر بیٹھنے کی اجازت نہیں دیں گے،نوازشریف کوپیغام دیناچاہتے ہیں ہم باہر آپکی کمی محسوس نہیں ہونے دینگے۔مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ یہ الیکشن کمیشن ناکام ہوچکا ہے،عوام اپنا حق چھیننے کا طریقہ جانتے ہیں ،ہم جمہوریت کے لئے کارکنوں کی قربانی کو ضائع نہیں ہونے دیں گے،عوام کے مینڈیٹ پر ڈاکا ڈالا گیا ہے،عوام کے حق کے ساتھ مذاق نہیں چلے گا،جمہوریت پر شب خون برداشت نہیں کیا جا سکتا،ہمارے کارکنوں نے قانون کی عملداری ،آئین کی بالادستی اور جمہوریت کے استحکام کے لئے قربانیاں دیں،جعلی وزیر اعظم کو اس باوقار منصب پر بیٹھنے کی اجازت نہیں دیں گے۔انہوںنے کہا کہ ہمارے اسلاف نے ملک کی آزادی کے لئے قربانیاں دیں،ہم اس آزادی کا تحفظ کرینگے،پوری قوم متحد ہے اور وہ اپنا حق حاصل کرے گی،ہمیں اس ملک، اس کی طاقت، آزادی اور جمہوریت کو بچانا ہے،کل صوبائی دارالحکومتوں میں ٹکٹ ہولڈز،پارٹی کارکنوں کے مظاہرے ہونگے،نوازشریف کوپیغام دیناچاہتے ہیں ہم باہر آپکی کمی محسوس نہیں ہونے دینگے۔

Scroll To Top