پنجاب میں حکومت سازی کیلئے تحریک انصاف کو عددی برتری حاصل

  • وفاق کے بعد تخت لاہورمیں بھی ن لیگ کا دھڑن تختہ ہونے کا امکان روشن،تحریک انصاف 122 نشستوں کے ساتھ مسلم لیگ ن کومات دینے کے لئے تیار،اٹھارہ آزاد امیدوار آج پی ٹی آئی میں شامل ہونے کا باضابطہ اعلان کرینگے،مسلم لیگ ق کی حمایت بھی حاصل ہے
  • ن لیگ میں حکومت سازی سے قبل فارورڈ بلاک بننے کا امکان ، پارٹی کے 20۔25 کے قریب نو منتخب صوبائی اراکین اسمبلی کے اپنے سینئرز سے رابطوں کا انکشاف،حمزہ شہباز شریف کے وزیر اعلیٰ پنجاب نامزد ہونے کی صورت میں بغاوت کی تیاری مکمل

pti-punjabلاہور(الاخبار نیوز) تخت پنجاب کے لیے جاری سیاسی جنگ میں تحریک انصاف کو ن لیگ پر برتری حاصل ہے تفصیلات کے مطابق وفاق کے بعد تخت لاہورمیں بھی ن لیگ کے دھڑن تختہ ہونے کا امکان ہے. تحریک انصاف نے پنجاب میں حکومت بنانے کا اعلان کر دیا.الیکشن کمیشن آف پاکستان کے نتائج کے مطابق ن لیگ129 نشستوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہے، جب کہ تحریک انصاف کا 122 نشستوں کے ساتھ دوسرا نمبر ہے.تجزیہ کاروں کے مطابق تحریک انصاف نمبرگیم میں مسلم لیگ ن کومات دے سکتی ہے، دعویٰ کیا جارہا ہے کہ اٹھارہ آزاد امیدوارکل پی ٹی آئی میں شامل ہوں گے.ساتھ ہی تحریک انصاف کو مسلم لیگ ق کی حمایت بھی حاصل ہے، دونوں پارٹیوں نے عام انتخابات میں سیٹ ایڈجسمنٹ کی تھی.اگر تحریک انصاف کامیاب رہی، تو دس سال کے طویل عرصے بعد پنجاب میں ن لیگ اقتدارسے باہرہوجائے گی.حکومت بنانے کے لیے149 کا عدد درکار ہے. پی ٹی آئی نے ابتدائی طورپر18 آزاد امیدواروں سے رابطہ کیا ہے، جو جلد عمران خان کےساتھ پریس کانفرنس کریں گے.پنجاب میں پاکستان مسلم لیگ(ن) میں نئی حکومت سازی سے قبل فارورڈ بلاک بننے کا امکان پیدا ہو گیا،20اور25 کے قریب لیگی صوبائی اراکین کے اپنے سینئرز سے رابطے کرنے کا انکشاف ہوا ہے ۔انتہائی معتبر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ حمزہ شہباز کو اگر وزیراعلیٰ پنجاب بنایا جاتا ہے تو اس صورت میں (ن)لیگ میں فارورڈ بلاک بن جائے گا اور پاکستان مسلم لیگ(ن) کے دو درجن کے قریب لیگی صوبائی اراکین نے اپنے سینئر پارلیمنٹرینز سے رابطے کیے ہیںاور کہا ہے کہ پنجاب میں مسلم لیگ(ن) کی حکومت کو کسی صورت قبول کرنے کو تیار نہیں ہیں ایسی صورتحال میں اگر پاکستان تحریک انصاف انہیں قبول کرے تو وہ ن لیگ سے علیحدگی اختیار کرکے ایک فارورڈ بلاک بنانے کیلئے اقدامات اٹھا سکتے ہیں۔دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف کے ذرائع کا کہنا ہے کہ فارورڈ بلاک بنانے میں پاکستان تحریک انصاف کوئی دلچسپی نہیں رکھتی اور اس قسم کے امیدواروں کو پارٹی میں جگہ ملنے یا نہ ملنے پر بھی کوئی تبصرہ نہیں کیا جاسکتا لیکن یہ بات اٹل ہے کہ فارورڈ بلاک پاکستان مسلم لیگ(ن) کے اندرونی مسائل کا شاخسانہ ہو گا ۔

Scroll To Top