پاکستانی ٹیم پر اسپن اٹیک کا کیوی منصوبہ بے نقاب

انجرڈ مچل سینٹنر کی جگہ سنبھالیں گے، گرین شرٹس کیخلاف ون ڈے اور ٹوئنٹی 20 سیریز کے پلیئرز کا بھی اعلان۔ فوٹو : فائل

انجرڈ مچل سینٹنر کی جگہ سنبھالیں گے، گرین شرٹس کیخلاف ون ڈے اور ٹوئنٹی 20 سیریز کے پلیئرز کا بھی اعلان۔ فوٹو : فائل

ویلنگٹن:  کیویز کا گرین کیپس پر اسپن اٹیک کا منصوبہ بے نقاب ہوگیا۔

نیوزی لینڈ نے پاکستان کے خلاف اکتوبر میں شیڈول ٹیسٹ سیریز کے لیے اسکواڈ میں ایک ساتھ تین اسپنرز کو شامل کیا ہے جن میں پہلی بار منتخب ہونے والے لیفٹ آرم اسپنر اعجاز پٹیل بھی موجود ہیں جوکہ بھارت میں جنم لینے والے پہلے کیوی کرکٹر ہونگے۔ وہ گذشتہ تین ڈومیسٹک فرسٹ کلاس سیزنز میں ٹاپ وکٹ ٹیکر رہے ہیں، انھیں انجرڈ مچل سینٹنر کی جگہ سلیکٹ کیا گیا ہے جوکہ بدستور گھٹنے کی تکلیف سے نجات کیلیے کوشاں ہیں۔

29 سالہ اعجاز پٹیل کو گذشتہ برس ڈومیسٹک پلیئر آف دی ایئر کا ایواڈ دیا گیا تھا، انھوں نے اپنی ٹیم سینٹرل اسٹیجز کو پانچ برس میں پہلی بار فرسٹ کلاس ٹائٹل جتوایا تھا۔ اس دوران انھوں نے 21.52 کی اوسط سے 48 وکٹیں لیں، وہ اسکواڈ میں موجود فرنٹ لائن اسپنرز ایش سودھی اور ٹوڈ ایسٹلے کو جوائن کرینگے۔

سلیکٹر گیوین لارسین کہتے ہیں کہ اعجاز گذشتہ دو برس کے دوران ڈومیسٹک فرسٹ کلاس کرکٹ میں بے مثال پرفارمنس کی بنیاد پر سلیکشن کے حقدار تھے۔ سینٹنر چونکہ ابھی تک گھٹنے کی سرجری کے بعد مکمل طور پر فٹ نہیں ہوسکے ہیں اس لیے یو اے ای کی کنڈیشنز میں ہمیں اب ایسٹلے اور سودھی کی شکل میں رسٹ اور پٹیل کی وجہ سے فنگر اسپنر کا آپشن دستیاب ہوگا۔ اعجاز پٹیل نیوزی لینڈ اے کے ساتھ اکتوبر کے آغاز پر ہی یو اے ای روانہ ہوجائیں گے اور وہاں پر وہ ون ڈے اور ٹوئنٹی 20 میں دو دستیاب جگہوں کے لیے مقابلہ بھی کریں گے۔

اے اسکواڈ میں پہلی بار فاسٹ بولرز کائیل جیمیسن اور بلیئر ٹکنر اور انڈر 19 پلیئر راچن روندرا کو شامل کیا گیا ہے۔ اے ٹیم کے دو میں سے ایک پلیئر کو ٹوئنٹی 20 اسکواڈ میں ٹرینٹ بولٹ کی جگہ لینے کا موقع میسر آئے گا جوکہ ٹیسٹ اور ایک روزہ سیریز کے بعد بچے کی پیدائش کی وجہ سے گھر واپس لوٹ جائینگے۔

ٹیسٹ اسکواڈ میں وکٹ کیپر بریڈلی جان واٹلنگ کے بیک اپ کے لیے ٹام بلنڈیل کو بھی منتخب کیا گیا ہے جبکہ واٹلنگ کی ون ڈے اسکواڈ میں واپسی ہوئی ہے، انھوں نے آخری ایک روزہ میچ اکتوبر 2016 میں کھیلا تھا مگر کہا جارہا ہے کہ وہ آئندہ برس شیڈول ورلڈ کپ کے کیوی پلان کا حصہ ہیں۔

فاسٹ بولر ایڈم ملن کی بھی ٹوئنٹی 20  اسکواڈ میں واپسی ہوئی ہے جبکہ ٹم سیفرٹ، مارک چیپمین اور لوکی فرگوسن پہلے اے ٹیم کے ساتھ ٹوئنٹی 20 کھیلیں گے اور پھر پاکستان کے ساتھ مختصر ترین فارمیٹ کے انٹرنیشنل مقابلوں کے لیے اسکواڈ جوائن کریں گے۔ نیوزی لینڈ کا ٹیسٹ اسکواڈ کپتان کین ولیمسن، جیت راول، ٹام لیتھم، روس ٹیلر، ہینری نکولس، بی جے واٹلنگ، ٹام بلنڈیل، کولن ڈی گرینڈہوم، ٹوڈ ایسٹلے، ایشن سودھی، اعجاز پٹیل، ٹم ساؤتھی، نیل ویگنر، میٹ ہینری، ٹرینٹ بولٹ پر مشتمل ہے۔

ون ڈے ٹیم میں کپتان ولیمسن، گپٹل، کولن منرو، ٹیلر، نکولس، لیتھم، واٹلنگ، ڈی گرینڈ ہوم، ایسٹلے، سودھی، ساؤتھی، ہینری، بولٹ اور دو کھلاڑی اے ٹیم سے منتخب ہونگے۔ ٹی 20 دستے میں ولیمسن، چیپمین، ڈی گرینڈہوم، لوکی فرگوسن، گپٹل، ایڈم ملن، کولن منرو، سیٹھ رینس، ٹم سیفرٹ، سودھی، ساؤتھی، روس ٹیلر اور دو اے ٹیم سے سلیکٹ ہونگے۔

پاکستان اے کیخلاف ٹی 20 ، ون ڈے اور فرسٹ کلاس میچز کیلیے نیوزی لینڈ اے کے اسکواڈ میں کورے اینڈرسن، ایسٹلے، بلنڈیل، ٹوم بروس، چیپمین، فرگوسن، کائیکل جیمیسن، اسکاٹ کوگیلیجن، اعجاز پٹیل، گلین فلپس، جیت راول، راچن راویندرا، سیفرٹ، بلیرء ٹکنیر، لوگن وان بیک، جارج ورکر، ول ینگ، ویگنر اور واٹلنگ شامل ہیں۔

Scroll To Top