پاکستان تحریک انصاف کی تاریخی فتح: نیا پاکستان، نیا وزیراعظم: عمران خان

  • آخری خبریں آنے تک پاکستان تحریک انصاف 117 نشستوں کے ساتھ پہلی ، مسلم لیگ ن 47 کے ساتھ دوسری ،پیپلز پارٹی 33 کے ساتھ تیسری پوزیشن پر، آزاد امیدوار 21، متحدہ مجلس عمل 12 ،ایم کیو ایم 8، پاکستان مسلم لیگ ق 5 اور گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس 3 نشستوں پر براجمان
  • پنجاب میں مسلم لیگ ن ،سند ھ میں پیپلز پارٹی ، خیبر پختونخوا میں تحریک پاکستان انصاف کے حکومت بننے کے امکانات روشن، بلوچستان میں مخلوط حکومت بنے گی ،پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان آج دوپہر 2بجے کارکنوں سے تاریخی خطاب کرینگے
اسلام آباد:۔ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اپنا ووٹ کاسٹ کرنے کے بعد وکٹری کا نشان بنائے ہوئے ہیں

اسلام آباد:۔ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اپنا ووٹ کاسٹ کرنے کے بعد وکٹری کا نشان بنائے ہوئے ہیں

اسلام آباد(این این آئی)غیر حتمی اور غیر سر کاری نتائج کے مطابق عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف نے 117کے ساتھ پہلی اور مسلم لیگ (ن)نے 47نشستوں کے ساتھ دوسری پوزیشن حاصل کرلی ہے ، نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کے وزیر اعظم بننے کے امکانات روشن ہوگئے ہیں جیت کے ساتھ پاکستان تحریک انصاف کے کارکنوں نے ملک بھر میں جشن منایا ، ریلیاں نکالیں ، آتش بازی کا مظاہرہ کیا اور مٹھائیاں تقسیم کیں ،پیپلز پارٹی کو 33، ایم ایم اے 12 اور ایم کیو ایم 8 ، 21 نشستوں پر آزاد امیدواروں کو برتری حاصل ہے۔تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کی 272 میں سے 267 نشستوں کے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق تحریک انصاف کو 117 اور مسلم لیگ (ن) کو 47 نشستوں پر برتری حاصل ہے۔ پولنگ کا عمل مکمل ہونے کے بعد وقفہ وقفہ سے انتخابی نتائج موصول ہوتے رہے ، غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق پیپلز پارٹی کو قومی اسمبلی کی 33، متحدہ مجلس عمل کو 12 اور گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کو 3 نشستوں پر برتری حاصل ہے۔اسی طرح ایم کیو ایم پاکستان 8، بی این پی مینگل 4، مسلم لیگ (ق)4، عوامی مسلم لیگ اور اے این پی کو ایک ایک نشست پر برتری حاصل ہے، قومی اسمبلی کی 24 نشستوں پر 21 آزاد امیدواروں کو بھی برتری حاصل ہے۔آخری اطلاعات کے مطابق مسلم لیگ (ن) کو پنجاب اسمبلی کی 131، تحریک انصاف کو 112، 36 نشستوں پر آزاد امیدواروں کو برتری حاصل ہے جب کہ پیپلز پارٹی کو 4 اور متحدہ مجلس عمل کو ایک نشست پر برتری حاصل ہے۔سندھ میں پیپلز پارٹی کو 55، گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس (جی ڈی اے) کو 10، تحریک انصاف کو 10اور ایم کیو ایم کو 4 نشستوں پر برتری حاصل ہے۔تحریک انصاف کو 36، عوامی نیشنل پارٹی 3، متحدہ مجلس عمل کو 5، مسلم لیگ (ن) کو تین اور 5 ا?زاد امیدواروں کو صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر برتری حاصل ہے۔صوبے میں بلوچستان عوامی پارٹی کو 5 نشستوں کے ساتھ برتری حاصل ہے جب کہ متحدہ مجلس عمل کو 4 اور تحریک انصاف کو بھی 4 نشستوں پر برتری حاصل ہے۔

Scroll To Top