مجرم نواز شریف کا نیا ڈرامہ فلاپ شدید نوعیت کی کوئی تکلیف نہیں میڈیکل بورڈ

نواز شریف کا واپس نہ آنے کا اعلان

راولپنڈی(صباح نیوز) اڈیالہ جیل میں قید سابق وزیراعظم نواز شریف کی خراب صحت کو معمولی قرار دیتے ہوئے پمز ہسپتال کے میڈیکل بورڈ نے فیصلہ کیا ہے کہ نواز شریف کو جیل سے باہر کسی ہسپتال منتقل نہ کیا جائے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ظاہری میڈیکل چیک اپ میں نواز شریف کو جیل میں ہی طبی امداد فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ نواز شریف کی مختلف ٹیسٹس کی مکمل رپورٹس آنے پر علاج کے حوالے سے حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔ پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز(پمز)کے میڈیکل بورڈ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو لیکویڈ کے زیادہ استعمال اورآرام کی ہدایت کی ہے۔پمز کے میڈیکل بورڈ نے اڈیالہ جیل میں ان کا معائنہ کرنے کے بعد جو میڈیکل رپورٹ تیار کی اس کے مطابق نوازشریف کے بلڈ ٹیسٹ اوریورین ٹیسٹ نارمل ہیں البتہ یوریا کی مقدارزیادہ ہے۔پاکستان مسلم لیگ(ن)کے تاحیات قائد نواز شریف کو میڈیکل بورڈ نے ہدایات کی ہے کہ جن ادویات کا وہ استعمال کررہے ہیں انہیں جاری رکھیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف کی آج ایکوکارڈیوگرافی کی جائےگی جب کہ ان کے علاج سے متعلق فیصلہ بھی پمزبورڈ کرے گا۔

Scroll To Top