انتخابات کا التوا ملک دشمن قوتوں کی کامیابی ہوگی، عمران خان

  • سراج رئیسانی محب وطن پاکستانی تھے ،اسی وجہ سے انہیں نشانہ بنایا گیا،الیکشن ملتوی ہوئے تو دہشت گرد کامیاب ہوجائیں گے، دہشت گردی کے خوف سے پاکستا ن تحریک انصاف جلسے منسوخ نہیں کرے گی ،مستونگ واقعہ انتہائی دردناک اور افسوسناک ہے ، جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے
  • میگا کرپشن میں ملوث نواز شریف آج اڈیالہ جیل میں بیٹھ کر مظلوم اور معصوم شکل بنا رہا ہے،22 سال پہلے کرپشن کے بادشاہ آصف زرداری اور نواز شریف کیخلاف مہم شروع کی جس کا ثمر ملنے کا وقت آن پہنچا ہے،چیئرمین پی ٹی آئی کی کوئٹہ میں گفتگو، جھنگ اور فیصل آباد میں انتخابی جلسوں سے خطاب
مستونگ:۔ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان بم دھماکے میں شہید ہونیوالے سراج رئیسانی کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کر رہے ہیں

مستونگ:۔ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان بم دھماکے میں شہید ہونیوالے سراج رئیسانی کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کر رہے ہیں

کوئٹہ (آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ سانحہ مستونگ کے پیچھے ملک دشمن عناصر ہیں جو 25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات کا التوا چاہتے ہیں الیکشن ملتوی ہوئے تو دہشت گرد کامیاب ہوجائیں گے، دہشت گردی کے خوف سے تحریک انصاف جلسے منسوخ نہیں کرے گی ان خیالات کا اظہا رانہوں نے کوئٹہ کے دورے کے موقع پر سی ایم ایچ میں سانحہ مستونگ کی زخمیوں کی عیادت کر نے کے بعد کوئٹہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کیا اس موقع پر پارٹی کے رہنماءبھی موجود تھے انہوں نے کہا ہے کہ سانحہ مستونگ کا واقعہ انتہائی دردناک اور افسوسناک واقعہ ہے اس واقعہ کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے سانحہ مستونگ کے واقعہ نے انتخابی مہم پر منفی اثرات مرتب کر دیئے مگر تمام تر حالات کے باوجود انتخابی مہم جاری رہے گا انہوں نے کہا ہے کہ جن لوگوں پر اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کے کیسز ہیں ان کے ساتھ نہیں مل سکتے اور اقتدار میں آنے کا فائدہ ہی کیا جب منشور پر عمل نہ ہو سانحہ مستونگ کے پیچھے ملک دشمن عناصر ہیں جو 25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات کا التوا چاہتے ہیں عمران خان نے کہا کہ الیکشن ملتوی ہوئے تو دہشت گرد کامیاب ہوجائیں گے، دہشت گردی کے خوف سے تحریک انصاف جلسے منسوخ نہیں کرے گی ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کا مقصد خوف پھیلانا اور الیکشن سبوتاژ کرنا ہے تاہم دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پورے ملک کو اکٹھا ہونا پڑے گا اور پولیس کو دہشت گردی کو شکست دینے کے لیے بڑا کردار ادا کرنا پڑے گاعمران خان نے کہا کہ پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ کرپشن ہے جس کی وجہ سے ملک مقروض ہوگیا، پیسے کی قدر میں کمی ہوئی اور ملکی معیشت دیوالیہ ہوگئی سانحہ مستونگ سے پورا پاکستان تکلیف میں ہے اور اس واقعے میں 200 سے زائد لوگ جاں بحق ہوچکے ہیں انہوں نے کہا ہے کہ اتنے بڑے دہشتگردی کے واقعے کے پیچھے ملک دشمن عناصر ہیں اور اس دہشت گردی کا مقصد انتخابات کو متاثر کرنا اور لوگوں میں خوف پھیلانا ہے ملک دشمن عناصر کا مقصد ہے کہ وہ دہشت گردی پھیلائیں اور اپنے مقاصد میں کامیاب ہوجائیں اور اسی لیے یہ سب کیا جارہاانہوں نے کہا کہ سراج رئیسانی محب وطن پاکستانی تھے اور شاید اسی وجہ سے انہیں نشانہ بنایا گیا۔
اس سے قبل جھنگ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ شریفوں نے پولیس کو تباہ کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے خیبرپختونخوا کی پولیس کو غیرسیاسی کرکے مثالی بنادیا ہے۔عمران خان کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا کی پولیس میں کوئی پیسے دے کر بھرتی نہیں ہوتا۔تحریک انصاف کے چیئرمین نے کہا کہ اللہ تعالی نے اگر موقع دیا تو پولیس اور بلدیاتی نظام کو ٹھیک کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ کسی ملک میں یہ تصور نہیں کہ وزیراعظم اور وزیراعلیٰ کہیں کہ میں نے آپ کو اسپتال دے دیا، جمہوریت میں ایسا نہیں ہوتا، ایسا بادشاہت میں ہوتا ہے۔عمران خان نے کہا کہ جمہوریت نظام کا نام ہے اور اس میں ادارے کام کرتے ہیں، لاہور کےبادشاہ کو کیا پتہ جھنگ کےمسائل کیا ہیں۔انہوں نے کہا کہ شہباز شریف نے فیصلہ کیا کہ ملتان میں میٹرو بنے لیکن ملتان کےعوام نے کہا ہمیں نہیں چاہئے اس کے باوجود 60 ارب روپے کی میٹرو چلادی۔ان کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا میں 30 فیصد ترقیاتی فنڈ بلدیاتی اداروں کو دیا جاتا ہے۔عمران خان نے کہا کہ عوام کا حق ہے کہ انہیں تعلیم، ٹیکنیکل ادارے اور کاروبار کیلئے قرضے ملیں۔انہوں نے کہا کہ ملتان میں 60 ارب کی میٹرو بنادی لیکن بسیں خالی چل رہی ہیں، یہ فیصلہ لاہور سے اس لیے کیا گیا کہ شریف خاندان کو اس میں کمیشن ملنا تھا۔ان کا مزید کہنا ہے کہ پنجاب کے ترقیاتی بجٹ کا آدھا پیسا لاہور پر لگا دیا گیا۔’نواز شریف جیل میں بیٹھ کر معصوم شکل بنارہا ہے‘دوسری جانب فیصل ا?باد میں جلسے سے خطاب میں عمران خان نے کہا ہے کہ نواز شریف آج اڈیالہ جیل میں بیٹھ کر مظلوم اور معصوم شکل بنا رہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ 22 سال پہلے کرپشن کے بادشاہ آصف زرداری اور نواز شریف کیخلاف مہم شروع کی، قوم کا پیسہ لوٹ کر یہ لوگ باہر چلے گئے، ان لوگوں نے چوری کرکے ملک کا مستقبل اندھیرے میں ڈال دیا۔ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کا دوسرا بیٹا اربوں روپے کے گھر میں بیٹھا ہے، مجرم نے قوم کا 300ارب روپیہ اپنے بچوں کی 16کمپنیوں میں ڈالا۔عمران خان نے کہا کہ اللہ ملک میں ایسی تبدیلی لائے گا،پاکستان اونچائی کا سفر پھر شروع کرےگا۔انہوں نے کہا کہ اچھے اور برےکی تمیز ختم ہوجائے تو قوم تباہ ہوجاتی ہے، قوم کا پیسا لوٹنے والے کا استقبال کرکے بچوں کو کیا پیغام دے رہے ہو، کیا ڈاکو پکڑا جائے تو اسے ہار ڈالیں گے؟ کندھے پر بٹھائیں گے یا اٹھاکر جیل میں ڈالیں گے؟چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ چھوٹے چوروں کو پیغام دیا جارہا ہے کہ بڑا ڈاکا مارنا کیوں کہ پھر پولیس نہیں پکڑتی۔انہوں نے کہا کہ یہ وقت رانا ثنائ اور عابد شیر علی جیسے لوگوں کو شکست دینےکا وقت ہے، ملک 30 سال سے چوروں کے شکنجے میں پھنسا ہوا تھا، 25 جولائی کو اس شکنجے سے نکلنے کا موقع ہے۔عمران خان نے کہا کہ عابدشیر علی کےوالد نے کہا کہ رانا ثنائ نے 18 قتل کرائے۔انہوں نے کہا کہ 10 سال میں 21 ہزار ارب روپے قرضہ لیا گیا، ملک میں کونسی خوشحالی آئی؟ آج پاکستان کی برآمدات گرگئیں جبکہ بھارت اور بنگلادیش کی برآمدات اوپر جارہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ بجلی اور گیس پر ٹیکس سے یہاں کی ٹیکسٹائل انڈسٹریز بند ہونا شروع ہوگئیں۔ان کا کہنا تھا کہ 2008 میں آٹے کی قیمت 13روپے کلو تھی آج 45روپے کلوہے، جو شوگر مل گنا لے کر کسانوں کو پیسا نہیں دےگی اس پرجرمانہ لگائیں گے اور بلیک لسٹ کریں گے۔عمران خان نے کہا کہ حکومت میں آکر روزگار کا پروگرام دیں گے، آسانی کیلیے ٹیکنیکل مراکزبنائیں گے۔

Scroll To Top