پشاور خود کش دھماکہ: اے این پی کے امیدوار ہارون بلور سمیت14شہید

  • حملہ یکہ توت کے علاقے میں اس وقت ہوا جب صوبائی اسمبلی کے امیدوار ہارون بلورجو کہ شہید بشیر بلور کے بیٹے تھے کارنر میٹنگ میں شرکت کیلئے داخل ہو رہے تھے، 15زخمیوں کی حالت نازک،ہارون بلور کے بیٹے دانیال بلور بھی واقعہ میں زخمی تاہم حالت خطرے سے باہر،دھماکے میں 8 کلو ٹی این ٹی کا استعمال کیا گیا
  • حملہ سیکورٹی اداروں کی کمزوری اور شفاف انتخابات کے خلاف سازش ہے،چیف الیکشن کمشنر سردار رضا، وزیر اعظم پی ٹی آئی چیئرمین ، پی پی پی چیئرمین ، پی پی پی شریک چیئرمین جے آئی چیف ، پی ایم ایل این کے صدر ، قائمقام صدرو دیگر قومی رہنماﺅں نے دالخراش واقعہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے ملزمان کی جلد از جلد گرفتاری اور انہیں کیفرتک پہنچانے کا مطالبہ کیا ہے
پشاور:۔اے این پی کی کارنرمیٹنگ کے دو ران ہونیوالے خود کش دھماکے میں شہید اور زخمی ہونیوالوں کو جائے وقوعہ سے ہسپتال منتقل کیا جا رہا ہے

پشاور:۔اے این پی کی کارنرمیٹنگ کے دو ران ہونیوالے خود کش دھماکے میں شہید اور زخمی ہونیوالوں کو جائے وقوعہ سے ہسپتال منتقل کیا جا رہا ہے

پشاور(الاخبا ر نیوز)میٹنگ کے دوران خودکش حملے کے نتیجے میں پارٹی رہنما اور بشیر بلور کے بیٹے ہارون بلور سمیت 14 افراد شہید ہوگئے ہیں۔پولیس کے مطابق خودکش حملہ پشاور کے علاقے یکہ توت میں اس وقت ہوا جب ہارون بلور کارنر میٹنگ میں داخل ہوئے اور اسٹیج کی طرف جارہے تھے کہ خودکش حملہ آور نے انہیں نشانہ بنایا۔پی کے 78 سے اے این پی کے امیدوار ہارون بلور کے اہلخانہ نے ان کی شہادت کی تصدیق کردی ہے۔سی سی پی او پشاور قاضی جمیل نے کہا کہ واقعہ 11 بجے کے قریب پیش آیا جس میں متعدد افراد زخمی بھی ہوئے۔قاضی جمیل نے بم ڈسپوزل یونٹ کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ دھماکے میں 8 کلو ٹی این ٹی کا استعمال کیا گیا تھاان کا کہنا تھا کہ ہارون بلور کی سیکیورٹی پر دو پولیس اہلکار مامور تھے۔اے ا?ئی جی بم ڈسپوزل شفقت ملک نے خودکش حملے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ اس میں اچھے معیار کا دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا تھا۔پولیس کے مطابق خود کش حملہ آور کارنر میٹنگ میں پہلے سے موجود تھا اور اس نے دھماکا اس وقت کیا جب ہارون بلور کی آمد پر آتش بازی کی جا رہی تھی۔ترجمان لیڈی ریڈنگ اسپتال ذوالفقار علی بابا خیل نے بتایا کہ ہارون بلور کے بیٹے دانیال بلور محفوظ ہیں۔چیف الیکشن کمشنر سردار محمد رضا نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حملہ سیکورٹی اداروں کی کمزوری ہے۔انہوں نے کہا کہ حملہ شفاف الیکشن کے خلاف سازش ہے، تمام امیدواروں کو یکساں سیکورٹی فراہم کرنے کے احکامات دیے گیے۔سردار محمد رضا نے کہا کہ صوبائی حکومتوں کو امیدواروں کی فول پروف سیکورٹی کے احکامات دیے گئے

Scroll To Top