مسلح افواج کا بھاشا،مہمند ڈیمز کی تعمیر کیلئے فنڈز کا اعلان

  • فنڈز کا پہرہ دیں گے،کرپشن نہیں ہونے دیں گے، چیف جسٹس پاکستان
    یہ تاثر پیدا کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ جیسے فنڈ کا قیام حکومت کے کہنے پر عمل میں آیا ہے، اسٹیٹ بینک نے اکاو¿نٹ کھولنے میں 3 دن لگادئیے ، عطیات جمع کرانے والوں کیلئے سہولیات کی بجائے رکاوٹیں کھڑی کی گئیں جبکہ لوگ ڈیمزکےلئے رقوم لے کر گھوم رہے ہیں، جن کے ہاتھ چومنے کو جی چاہتا ہے،چیف جسٹس کے ریمارکس
  • تینوں مسلح افواج کے افسران دو، دو دن کی جبکہ جوان ایک ،ایک دن کی تنخواہ عطیہ کریں گے، مسلح افواج نے یہ قدم بحیثیت ادارہ اٹھایا ہے،ڈائریکٹر جنرل انٹر سروسز پبلک ریلیشنز میجر جنرل آصف غفور کا سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹوئٹر پیغام،ٹوئٹ کے آخر میں ہیش ٹیگ کے ساتھ ’ڈیمز پاکستان کیلئے‘ کا بھی نعرہ تحریر

سپریم کورٹ

راولپنڈی(این این آئی)سپریم کورٹ نے وزرات خزانہ کی جانب سے ملک میں ڈیم کی تعمیر کے لیے کھولے جانے والے بینک اکاو¿نٹ کا نوٹس لے لیا۔ پیر کو چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ میں ڈیم کی تعمیر سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔اس دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ اسٹیٹ بینک یہ تاثر قائم کر رہا ہے کہ ڈیم کی تعمیر کےلئے اکاونٹ حکومت نے بنایا، اسٹیٹ بینک نے ہمیں تکلیف پہنچائی۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ اسٹیٹ بینک نے اکاو¿نٹ کھولنے میں 3 دن لگادئیے ، اسٹیٹ بینک ہمیں ایک جگہ سے دوسری جگہ گھماتا رہا جبکہ لوگ ڈیم کےلئے پیسے لے کر گھوم رہے ہیں، ڈیم کےلئے پیسے دینے والوں کے ہاتھ چومنے چاہئیں۔دوران سماعت جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیے کہ اسٹیٹ بینک آسانیاں پیدا کرنے کے بجائے مشکلات کھڑی کررہا ہے۔چیف جسٹس نے کہا کہ یہ تاثر دیا جارہا ہے کہ سپریم کورٹ کے قائم کردہ فنڈ میں پیسے نہیں دئیے جارہے، کل کوئی کہہ رہا تھا کہ ہم اپنے کپڑے بیچ کر ڈیم بنائیں گے ،بیچیں اپنے کپڑے، چپلیں اور فنڈ میں پیسے دیں، پہلے کیوں چپلیں اور کپڑے نہیں بیچے گئے؟عدالت میں سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ سپریم کورٹ نے فنڈز قائم کیے ہیں، کسی کو کمیشن نہیں کھانے دیں گے، ڈیم کے لیے قائم فنڈ میں ایک دھیلے کی بھی کرپشن نہیں ہونے دیں گے، ڈیم کے لیے بنائے گئے اکاونٹ کا آڈٹ ہوگا، ہم خود پہرہ دیں گے، یہ فنڈز سپریم کورٹ نے قائم کیے ہیں۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ آج کے انگریزی اخبارات دیکھیں فنانس ڈویژن کی جانب سے کیا چھپا ہوا ہے، ہمیں پیغامات آرہے ہیں کہ حکومت پر اعتماد نہیں، لوگوں کا کہنا ہے کہ ہم حکومت کے بنائے گئے اکاو¿نٹ میں پیسے نہیں دیں گے۔ دوران سماعت چیف جسٹس نے کہا کہ وزارت خزانہ نے ڈیم کے لیے اکاو¿نٹ کھولا ہے، اٹارنی جنرل وزیر اعظم سے بات کرکے عدالت کو بتائیں۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ آنے والے دو چیف جسٹس صاحبان کو بھی کہ دیں وہ بھی نگرانی کریں گے۔بعد ازاں عدالت نے سیکریٹری فنانس کو (آج)10 جولائی کو ذاتی حیثیت میں طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔ دریں اثناء تینوں مسلح افواج کی جانب سے دیامر بھاشا اور مہمند ڈیم کی تعمیر کےلئے دو دن کی تنخواہ دینے کا اعلان کیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے دیامر بھاشا اور مہمند ڈیم کی تعمیر کا حکم دے رکھا ہے اور اس حوالے سے چیف جسٹس نے ایک فنڈ بھی قائم کیا ہے جس میں انہوں نے عوام سے تعاون کی اپیل کی کہ چیف جسٹس نے ڈیمز کی تعمیر کےلئے دس لاکھ روپے عطیہ کیے ہیں۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بتایا کہ دیامربھاشا اورمہمند ڈیمز کےلئے مسلح افواج کے افسران دو دن کی تنخواہ دیں گے۔آصف غفور نے کہا کہ پاک فوج، بحریہ اور فضائیہ کے افسران دو دن کی تنخواہ دیں گے جب کہ سپاہی ایک دن کی تنخواہ دیں گے۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ مسلح افواج نے بحیثیت ادارہ یہ قدم اٹھایا ہے۔میجر جنرل آصف غفور نے ٹوئٹ کے آخر میں ہیش ٹیگ کے ساتھ ’ڈیمز پاکستان کیلئے‘ کا بھی نعرہ لگایا۔

Scroll To Top