سکس اے سائیڈ ورلڈ کپ، پاکستان روس ، اسپین اورمالڈواکے مدمقابل

d

ایونٹ 23 تا 29 ستمبر پرتگال کے شہر لسبن میں کھیلا جائے گا، 32 ٹیموں کو چار چار پر مبنی 8 گروپ میں تقسیم کیا گیا ہے (فوٹو: فائل)

کراچی: انٹرنیشنل سوکافیڈریشن کے زیر اہتمام پہلا سکس اے سائیڈ ورلڈ کپ 23 تا 29 ستمبر 2018ء پُرتگال کے شہر لسبن میں کھیلا جائے گا، جس میں دنیائے فٹبال کی 32 ممالک کی ٹیمیں شرکت کریں گی۔

ورلڈ کپ میں پاکستان کی نمائندگی کا اعزاز گذشتہ دنوں کراچی میں منعقد ہونے والی لیثرر لیگس نیشنل چمپئن شپ کی فاتح لاہور کی آئی سی اے ڈبلیو (آئی کین اینڈ وِل) کو حاصل ہوا ہے جس نے فائنل میں پشاور کی شنواری ایف سی کو ٹائی بریکر پر شکست دی تھی۔ اسے گروپ ’بی‘ میں رشیا، اسپین اور مالڈوا کے ہمراہ رکھا گیا ہے۔

آئی ایس ایف کے منتخب نائب صدر شاہ زیب محمود ٹرنک والا نے سکس اے سائیڈ ورلڈ کپ میں پاکستان کی نمائندگی کو ایک بہت بڑا اعزاز قرار دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی ٹیم کو عالمی سطح کے ایونٹ میں براہ راست شرکت کا اعزاز حاصل ہونے جارہا ہے توقع ہے کہ لاہور کی آئی سی اے ڈبلیو بہترین تیاری کے ساتھ عالمی ایونٹ میں پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرکے ملک و قوم کا نام روشن کرے گی۔

کپتان آئی سی اے ڈبلیو آفاق احمد نے کہا کہ ہم اپنی پوری تیاری کے ساتھ ورلڈ کپ میں شرکت کےلیے پرتگال جائیں گے ہم اپنے گروپ میں موجود روس اور اسپین کی ٹیموں کو شکست دے کر دنیا کو حیران کرنے کے لیے پُرعز م ہیں۔ ورلڈ کپ میں پاکستان کی نمائندگی کرنا میری اور میری ٹیم کے لیے کسی اعزاز سے کم نہیں۔

واضح رہے کہ سکس اے سائیڈ ورلڈ کپ میں بھارت کی ٹیم بھی موجود ہے جسے گروپ ’جی‘ میں جرمنی ، کروشیا اور انگولا کے ہمراہ رکھا گیا ہے۔ دیگر گروپ میں گروپ ’اے‘ ُپرتگال، پیراگوئے، ترکی، یونان، گروپ ’سی‘ بیلجئم، چائنا، ویلز، اسکاٹ لینڈ، گروپ ’ڈی‘ فرانس، الجیریا، کینیڈا، آئرلینڈ، گروپ ’ای‘ انگلینڈ، یوایس اے، قازقستان، سلوواکیہ، گروپ ’ایف‘ برازیل، مصر، بلغاریہ، لاٹویا اور گروپ ’ایچ ‘پولینڈ، تنسیا، اومان اور سلووینیا کی ٹیموں پر مشتمل ہے۔

Scroll To Top